مغربی افغانستان میں بھارتی قونصلیٹ کے نزدیک خودکش حملہ

افغان طالبان کا حملے کی ذمہ داری قبول کرنے سے انکار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

افغانستان کے مغربی شہر جلال آباد میں واقع بھارتی قونصل خانے کے نزدیک ایک خود کش کار بم حملے کے نتیجے میں کم ازکم 9 ہلاک جبکہ 23 افراد کے زخمی ہو گئے۔

غیر ملکی خبر رساں اداروں نے جلال آباد سے موصولہ اطلاعات کے حوالے سے بتایا "ہفتے کے روز تین حملہ آوروں نے بارود سے بھری گاڑی کو بھارتی قونصل خانے کے قریب کھڑی کی گئی رکاوٹوں سے ٹکرا دیا۔" حملے کے فوری بعد افغان طالبان نے اس دھماکے میں اپنے ملوث ہونے سے انکار کر دیا۔

بتایا گیا ہے کہ دھماکے کی شدت اتنی زیادہ تھی کہ قریبی مکانات اور دوکانوں کو بھی شدید نقصان پہنچا۔ ننگرہار صوبے کے حکومتی ترجمان احمد زئی عبدالزئی نے اے ایف پی کو بتایا، ’’بارود سے بھری گاڑی قونصل خانے کے قریب رکاوٹوں سے ٹکرائی تو ایک بہت زور دار دھماکا ہوا۔‘‘ انہوں نے تصدیق کی کہ گاڑی میں تین خود کش حملہ آور سوار تھے۔

ننگرہار صوبے کے پولیس سربراہ شریف امین نے بتایا ہے کہ اس حملے میں آٹھ شہری مارے گئے ہیں جبکہ کم از کم بائیس زخمی ہوئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ زخمیوں میں خواتین، برزگ شہری اور بچے بھی شامل ہیں۔ طبی ذرائع نے بھی ان ہلاکتوں کی تصدیق کر دی ہے۔

نئی دہلی میں بھارتی وزارت خارجہ کے اعلیٰ اہلکار سید اکبر الدین نے اس حملے سے متعلق اپنی ایک ٹویٹ میں لکھا ہے کہ جلال آباد میں یہ حملہ بھارتی قونصل خانے کے بالکل سامنے ہوا لیکن اس میں وہاں تعینات بھارتی حکام کو کوئی نقصان نہیں پہنچا۔

جائے وقوعہ پر موجود اے ایف پی کے ایک فوٹو گرافر نے بتایا کہ حملے کے فوری بعد ہی امدادی ٹیمیں وہاں پہنچ گئیں اور سکیورٹی اہلکاروں نے دھماکے کی جگہ کو گھیرے میں لے لیا۔

افغان طالبان کے ترجمان ذبیح اللہ مجاہد نے فرانسیسی خبر رساں ادارے کو بتایا ہے کہ طالبان اس حملے میں ملوث نہیں ہیں، ’’ ہمارے جنگجوؤں نے جلال آباد میں یہ حملہ نہیں کیا ہے، ہم اس حملے کی ذمہ داری قبول نہیں کرتے۔‘‘

افغانستان میں 2001ء میں طالبان کی حکومت ختم ہونے کے بعد سے بھارت وہاں قریب دو بلین ڈالر کی سرمایہ کاری کر چکا ہے۔ تاہم اس شورش زدہ ملک میں بھارتی اہداف کو ماضی میں بھی نشانہ بنایا جا چکا ہے۔ 2008ء میں افغانستان میں بھارتی سفارتخانے پر کار بم حملے کے نتیجے میں 60 افراد مارے گئے تھے جبکہ 2010ء میں خود کش حملہ آوروں نے دو گیسٹ ہاؤسز پر حملے کرتے ہوئے سولہ افراد کو ہلاک کر دیا تھا، جن میں سات بھارتی باشندے بھی شامل تھے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں