نیوز ویک کو ایک بار پھر نئے مالکان کی تلاش ہے!

ڈیجیٹل کمپنی نے معروف امریکی ہفت روزہ خریدنے کا عندیہ دیدیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

بین الاقوامی صحافت کا شاہکار ہفت روزہ جریدہ 'نیوز ویک' ایک بار پھر سے فروخت ہونے جا رہا ہے۔ ڈیجیٹل نیوز پبلشرز آئی بی ٹی میڈیا [انٹرنیشنل بزنس ٹائمز] نے ایک بیان میں انکشاف کیا ہے کہ وہ پرنٹ کی دنیا کے معروف امریکی جریدہ 'نیوز ویک' کو خرید رہی ہے۔ آئی بی ٹی کے بیان میں معاہدے کی شرائط کے بارے میں تفصیل نہیں بتائی گئی تاہم اتنا ضرور کہا گیا ہے کہ مستقبل قریب میں یہ معاہدہ طے پا جائے گا۔ آئی بی ٹی میڈیا نیوز ویک اور اس کی آن لائن اشاعت کے آپریشنز آئی اے سی [انٹرایکٹو کارپوریشن] سے خرید رہی ہے۔

نیوز ویک، امریکا میں سب سے زیادہ شائع ہونے والا دوسرا ہفت روزہ میگزین تھا۔ سال 2012 میں نیوز ویک کی اس وقت کی انتظامیہ نے امریکا میں اس کی اشاعت بند کرکے اسے ڈیجیٹل ایڈیشن تک محدود کر دیا۔ نیوز ویک میگزین کے انگریزی زبان میں چار ایڈیشن جبکہ عالمی سطح پر 12 مختلف ایڈیشن شائع ہوتے تھے۔

نیوز ویک کا آغاز ٹائم میگزین سے وابستہ ایک صحافی 1933ء میں کیا تھا جس کے بعد 90 کی دہائی کے آغاز میں اس کی اشاعت بڑھ کر کئی لاکھ تک پہنچ گئی تھی اور دنیا کے مختلف حصوں میں اس کے علاقائی ایڈیشن بھی شائع ہونے لگے۔ مگر دوسرے پرنٹ جریدوں کی طرح نیوز ویک بھی ڈیجیٹل دنیا کے سیلاب کے آگے نہ ٹھہر سکا اور اس کی اشاعت بتدریج کم ہوتی رہی۔

سال 2010ء میں ایک امریکی ارب پتی سڈنی ہرمن نے واشنگٹن پوسٹ گروپ سے نیوز ویک جریدے کو ایک ڈالر اور جریدے کے ذمے واجب الادا 40 ملین ڈالر کی ادائیگی کے بدلے خرید لیا تھا۔ اس کے کچھ عرصے بعد نیوز ویک میگزین انٹر ایکٹو کورپوریشن کی ملکیت میں آ گیا۔

سن 2006ء میں معرض وجود میں آنے والے آئی بی ٹی میڈیا گروپ کے زیر اہتمام انٹرنیشنل بزنس ٹائمز، میڈیکل ڈیلی، لاطینی ٹائمز اور آئی ڈیجیٹل ٹائمز جیسے آن لائن پورٹلز پہلے ہی کام کر رہے ہیں۔ آئی بی ٹی میڈیا کے عہدیداران کا کہنا تھا کہ،"ہم نیوز ویک برانڈ میں بھروسہ رکھتے ہیں اور اسے مکمل طور پر ڈیجیٹل شکل میں ڈھال کر پھلتا پھولتا دیکھنا چاہتے ہیں۔ نیوز ویک برانڈ پوری دنیا میں مشہور ہے اور ہمارا یہ ماننا ہے کہ اس میں بہت بہتری کی گنجائش موجود ہے۔ اس کے ساتھ ساتھ ہم یہاں کے معاملات اور اپنے طریقہ کار کو مزید بہتر بنائیں گے۔"

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں