پونچھ سیکٹر: فوجی پوسٹ پرحملے میں پانچ بھارتی فوجی ہلاک

بھارت کو تفصیلات کا انتظار، پاک فوج ملوث نہیں۔ پاکستانی افسر

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

بھارت نے دعوی کیا ہے کہ منگل کی صبح لائن آف کنٹرول کے پونچھ سیکٹر پر کی گئی فائرنگ سے بھارت کے پانچ فوجی مارے گئے ہیں ۔ تاہم ابھی یہ واضح نہیں ہوا یہ پانچ فوجی کس کے حملے میں مارے گئے ہیں ۔ بھارتی افسر کے مطابق پونچھ سیکٹر کی چکاندا باغ پوسٹ پر حملہ ہوا لیکن ابھی تفصیل نہیں آئی ہے۔ بھارت کے سینئیر فوجی افسر نے یہ انکشاف ایک ایسے موقع پر کیا ہے جب بھارت اور پاکستان کے درمیان معطل مذاکرات از سرنو شروع کرنے کی تیاری ہو رہی ہے۔

دونوں ملکوں کی افواج لائن آف کنٹرول پرعملا آمنے سامنے کی پوزیشن میں رہتی ہیں، بھاری نفری کی تعیناتی کے حوالے سے بھی لائن آف کنٹرول غیر معمولی اہمیت کی حامل ۔ خصوصا بھارت نے چند روز قبل ہی پونچھ سیکٹر میں اپنی فوجی نفری بڑھانے کا اعلان کیا تھا۔

لائن آف کنٹرول پر ناخوشگوار واقعات کا تازہ سلسلہ ماہ جنوری میں اس وقت شروع ہوا تھا جب اسی پونچھ سیکٹر میں ایک بھارتی فوجی کو ہلاک کرنے کے بعد اس کی گردن کاٹ دی گئی تھی۔

منگل کے روز مارے جانے والے پانچ بھارتی فوجیوں کے حوالے سے بھارت کے زیر انتظام متنازعہ کشمیر کے ایک حصے کے وزیر اعلی عمرعبداللہ نے مرنے والے فوجیوں کے اہل خانہ کے ساتھ ٹوئٹر پر اظہار تعزیت کرتے ہوئے کہا ہے کہ انہیں اس واقعے کے بارے میں صبح ہی بریفنگ دے دی گئی تھی۔

ادھر نئی دہلی میں پارلیمنٹ کے جاری اجلاس میں اس مسلے پر ہنگامہ خیزی کا ماحول رہا اور ارکان نے اس بارے میں حکومت سے تفصیلات سامنے لانے کے لیے کہا۔ امکان ظاہر کیا گیا ہے کہ بھارتی وزیر دفاع اے کے انتھونی کسی بھی وقت تفصیلی بیان جاری کرسکتے ہیں ، تاہم نائب وزیر دفاع نے پارلیمنٹ کے باہر میڈیا سے بات کرتے ہوئے اس واقعے کو قابل افسوس قرار دیا ہے ۔ انہوں نے اس واقعے کی کوئی تفصیل ظاہر نہیں کی۔ دوسری جانب پاکستان کے ایک سنیئِر افسر نے اس واقعے میں پاک فوج کے ملوث ہونے کی تردید کی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں