جاپان کا افریقی ملکوں اور جنوبی امریکا میں فوجی تحقیقاتی مشن بھجوانے کا فیصلہ

ماہرین الجزائرجبوتی،مراکش، نائیجر، کینیا اور برازیل بھی جائیں گے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

جاپان کے ذرائع ابلاغ کا کہنا ہے کہ حکومت سات افریقی ممالک، جنوبی امریکا اور برازیل میں فوجی نوعیت کی معلومات کے حصول کے لیے اپنے ماہرین ان ملکوں میں بھجوانے کی تیاری کر رہا ہے۔

سرکاری خبر رساں ایجنسی "کیوٹو" نے وزارت دفاع کے ایک ذرائع کے حوالے سے بتایا ہے کہ ٹوکیو افریقی ملکوں میں انٹیلی جنس اور فوجی معلومات کے میدان کو وسعت دیتے ہوئے نئے ماہرین وہاں بھیجنے کا پروگرام بنا رہا ہے۔

اس سلسلے میں جاپان سات افریقی مُلکوں الجزائر، جیبوتی، مراکش، نائجیریا، ایتھوپیا، کینیا، جنوبی افریقہ کے ساتھ ساتھ برازیل اور جنوبی امریکا میں بھی اپنے فوجی ماہرین اور انٹیلی جنس حکام بھجوا رہا ہے۔ یہ فوجی مشن ان ملکوں میں دہشت گردی اور سیکیورٹی سے متعلق معلومات اکھٹی کریں گے۔ ذرائع کے مطابق ٹوکیو افریقی ملکوں میں اپنا اثرو نفوذ برطانیہ، فرانس اور جرمنی کے مساوی کرنے کے لیے سنہ 2014ء میں اضافی بجٹ بھی منظور کرے گا۔

خیال رہے کہ رواں سال کے آغاز میں الجزائرمیں ایک گیس کے اڈے پر دہشت گردوں نے حملہ کر کے دو جاپانی باشندوں کو یرغمال اور کئی غیرملکی شہریوں کو ہلاک کر دیا گیا تھا۔ جاپانی وزارت دفاع کا کہنا تھا کہ الجزائر میں جاپانی سفارت خانے میں ان کے فوجی اور انٹیلی جنس ماہرین کی عدم موجودگی کے باعث یہ واقعہ پیش آیا ہے۔ ٹوکیو نے اس واقعے کے بعد الجزائرمیں اپنے ماہرین کی تعداد بڑھانے کا فیصلہ کیا تھا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں