.

ڈیاگو میرا ڈونا دبئی میں حسیناؤں کے اسیر ہوگئے

عالمی شہرت یافتہ سابق فٹ بالر کی خوبرو عورتوں کے ساتھ نازیبا تصاویر

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

ارجنٹینا کے سابق عالمی شہرت یافتہ فٹ بالر ڈیاگو آرمانڈو میرا ڈونا ان دنوں دبئی میں مقیم ہیں اور ان کی خوبرو دوشیزاؤں کے ساتھ نازیبا تصاویر آئے دن منظرعام پر آرہی ہیں۔

تریپن سالہ میراڈونا کو دبئی کے لیے کھیلوں کا اعزازی سفیر مقرر کیا گیا تھا اور جولائی میں ان کی معاہدے کی تجدید کی گئی تھی۔ متحدہ عرب امارات کے روزنامے الف میں شائع ہونے والی ایک رپورٹ کے مطابق میراڈونا دبئی میں اپنے قیام سے خوب خوب فائدہ اٹھا رہے ہیں اور وہ اکثر اوقات خوبرو حسیناؤں میں جلو میں نظر آتے ہیں۔

دبئی میں کھیل کے میدان میں تو ان کے خاص کارنامے سامنے نہیں آئے ہیں۔ البتہ ان کی سوئمنگ پولز سمیت مختلف مقامات پر متعدد حسین عورتوں کے ساتھ نیم عریاں تصاویر منظرعام پر آچکی ہیں اور اس پر دبئی کے حکام بھی الرٹ ہوچکے ہیں کہ اب ان صاحب کے ساتھ کیا معاملہ کیا جائے۔

میراڈونا کو اس اخلاق باختہ کردار کے عملی مظاہرے پر تنقید کا سامنا ہے لیکن ان کے اس طرح کے کردار کے باوجود ذرائع کا کہنا ہے کہ دبئی کی کونسل ان کے ساتھ معاہدے کو مقررہ مدت سے قبل ختم کرنے کا کوئی ارادہ نہیں رکھتی ہے۔

یاد رہے کہ ڈیاگو میراڈونا نے 1986ء میں ارجنٹینا کی ٹیم کوعالمی کپ جتوانے میں اہم کردار ادا کیا تھا۔ اس کے بعد 1990ء میں منعقدہ فیفا عالمی کپ فٹ بال ٹورنا منٹ میں ارجنٹینا کی ٹیم کی قیادت کی تھی اور 1994ء کے عالمی کپ میں بھی اپنے ملک کی نمائندگی کی تھی۔

انھوں نے اپنی ''رابونا کک'' سے فٹ بال کی دنیا میں شہرت پائی تھی اور دومرتبہ ان پر ممنوعہ ادویہ کے استعمال پر پابندی لگی تھی لیکن اس کے باوجود فیفا کے ایک سروے میں انھیں بیسیویں صدی کا عظیم فٹ بالر قرار دیا گیا ہے۔

اب دبئی کے حکام کے ساتھ نازیبا تصاویر پر تعلقات کی خرابی نے ان کی شہرت کو متاثر نہیں کیا ہے اور انھوں نے حال ہی میں یواے ای کی جیولری کی دو دکانوں کے ساتھ معاہدے کیے ہیں اور ان میں سے ایک کا نام تبدیل کرکے نیا نام یہ رکھا گیا ہے''بوبی این میراڈونا گولڈ ڈائمنڈ جیولری۔''