.

پاکستانی نژاد آسٹریلوی کرکٹر کا شراب کے اشتہار والی شرٹ پہننے سے انکار

آسٹریلوی حکومت نے عقیدے کے احترام میں فواد احمد کا مطالبہ تسلیم کر لیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

آسٹریلیا نے پاکستانی نژاد آسٹریلوی کرکٹ ٹیم کے لیگ سپنر فواد احمد کو شراب کے اشتہار والی شرٹ نہ پہننے کی اجازت دے دی ہے۔ فواد احمد نے ماہ جولائی میں آسٹریلیا کی شہریت حاصل کی ہے۔ آسٹریلین کرکٹ ٹیم میں ایک بالر کے طور پر مفید اضافہ مانا جاتا ہے۔

فواد احمد نے آسٹریلیا کی طرف سے عالمی سطح پر اپنے کیرئیر کا آغاز انگلینڈ کے خلاف پہلے دو ٹونٹی ٹونٹی میچز سے کیا ہے، جبکہ اسے ایڈنبرگ سے شروع ہونے والے چھ ایک روزہ میچوں کی سیریز کے لیے آسٹریلین ٹیم کے بالنگ سکواڈ کا حصہ بنایا گیا ہے۔

فواد احمد نے آسٹریلین کرکٹ ٹیم میں شمولیت کے بعد مطالبہ کیا تھا کہ اسے اجازت دی جائی کہ کرکٹ ٹیم کے یونیفارم پر شراب کی مشہوری کے لیے لگائے گئے'' وکٹوریا بٹر کے بییجز'' اتار دیں کیونکہ وہ مذہبی ممانعت کی وجہ سے یہ پسند نہیں کرتا۔ واضح رہے وہ بی آسٹریلین ٹیم کی اہم اشتہاری کمپنی ہے۔

منگل کے روز ایگزیکٹو جنرل مینیجر برائے آپریشنز مائیک مکینا نے میڈیا کو بتایا حکومت نے فواد احمد کی بات سے اتفاق کر لیا ہے اور اسے اجازت دی ہے کہ وہ وی بی کے لوگو والی شرٹ استعمال نہ کرے۔

اس سے پہلے جنوبی افریقہ کے مسلمان بلے باز ہاشم آملہ کو بھی شراب ساز کمپنی کے "لوگو" والی شرٹ کے استعمال سے جنوبی افریقہ کی ٹیم سے استثنی مل چکا ہے۔