امریکا نے لبنان اور ترکی سےغیر ضروری سفارتی عملہ واپس بلا لیا

شہریوں کو بیروت اور انقرہ کا سفر اختیار کرنے کا انتباہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

امریکی حکومت نے شام کے خلاف ممکنہ فوجی کارروائی پر دہشت گردی کی دھمکیوں کے بعد ترکی اور لبنان میں اپنا سفارتی عملہ محدود کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

بیروت میں قائم امریکی سفارت خانےکی جانب سے اطلاع دی گئی ہے کہ غیر ضروری سفارتی عملہ اور ان کے خاندان کے دیگر افراد کو واپس امریکا بھیجا جا رہا ہے۔ ادھر امریکی وزارت خارجہ کے مطابق ترکی میں "اضنہ" شہر میں قائم امریکی قونصل خانے کے غیر ضروری عملے کو بھی واپس بلا لیا گیا ہے۔

بیروت میں امریکی سفارت خانے نے اپنی ویب سائٹ پر گذشتہ روز شائع کیے گئے عربی اور انگریزی زبانوں میں ایک بیان میں بتایا ہے کہ امریکی ہائی کمیشن کے عہدیداروں کو دھمکیاں ملی تھیں جس کے بعد وزارت خارجہ نے غیرضروری عملہ واپس بلوا لیا ہے۔ سفارت خانے کے تمام غیرضروری افراد اور ان کے اہل خانہ کو لبنان سے باہر بھجوانے کے انتظامات کرلیے گئے ہیں۔ بیان میں کہا گیا ہے کہ وزارت خارجہ نے امریکی شہریوں کو ہدایت کی ہے کہ لبنان کے سفر سے گریزکریں۔

درایں اثناء جمعہ کے روز واشنگٹن وزارت خارجہ کی جانب سے اطلاع دی گئی تھی کہ ترکی سے بھی غیرضروری عملہ واپس بلایا جا رہا ہے۔ وزارت خارجہ کے بیان کے مطابق ترکی کے "اضنہ" شہرمیں امریکی قونصلیٹ پر حملوں کی دھمکیوں کے بعد وہاں پرموجود تمام غیر ضروری افراد کو واپس لایا جا رہا ہے۔ امریکی وزارت خارجہ نے اپنے شہریوں کو جنوب مشرقی ترکی کا سفرکرنے سے بھی منع کیا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں