.

معائنہ کاروں کی رپورٹ، اب سلامتی کونسل کا امتحان ہے:جان کیری

شام کے خلاف کارروائی کے لیے اگلے ہفتے یو این کی قرارداد آ سکتی ہے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکی وزیر خارجہ جان کیری نے کہا ہے کہ یو این معائنہ کاروں کی رپورٹ سامنے آنے کے بعد شام کے خلاف اقوام متحدہ کی دوٹوک قرارداد کے تحت کارروائی ضروری ہو گئی ہے۔ جان کیری نے کہا معائنہ کاروں کی رپورٹ نے واضح طور ثابت کر دیا ہے کہ 21 اگست کو الغوطہ میں کیمیائی ہتھیاروں کا استعمال شامی حکومت نے کیا تھا ۔

اس لیے اگلے ہفتے شام کے خلاف کارروائی کے لیے ایک قرارداد منظور کر لی جائے گی۔ امریکی وزیر خارجہ نے اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کے ارکان کا نام لیے بغیر کہا اب یہ ان کا امتحان ہے، سلامتی کونسل کو چاہیے کہ اگلے ہفتے شام کے خلاف کارروائی کی تیاری کرے۔''

امریکی وزیر خارجہ کا ایک عالمی خبر رساں ادارے سے بات کرتے ہوئے یہ بھی کہنا تھا '' بین الاقوامی برادری کی بقا کے لیے ضروری ہے کہ اس معاملے میں اٹھ کھڑی ہو اور خاموش نہ رہے۔''

دوسری جانب شام کے نائب وزیر اعظم پہلے ہی یہ انکشاف کر چکے ہیں کہ شام میں جاری خانہ جنگی اب ایک سطح پر آکے رک گئی ہے، یہ کسی فریق کے لیے بھی ممکن نہیں کہ وہ دوسرے کو شکست دے سکے۔ انہوں نے کہا جنیوا میں جاری امن مذاکرات مزید طویل ہو گئے تو شامی حکومت باغیوں کو فائربندی کرنے کی دعوت دے گی۔

ایک سوال پر شام کے نائب وزیر اعظم کا کہنا تھا '' شام میں امن کے لیے بیرونی مداخلت رکنی چاہیے، اور دوطرفہ سیز فائر کے بعد سیاسی عمل شروع کیا جانا چاہیے ۔''