تیونس: وزارتِ داخلہ میں "متوازی سیکیورٹی" نظام سے حکومت پریشان

سیاسی جماعتوں کے وفادار سیکیورٹی اداروں میں گھس چکے: وزیر داخلہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

تیونس میں اپوزیشن کے دباؤ کی شکارحکومت نے شکایت کی ہے کہ سیاسی جماعتوں نے وزارت داخلہ میں اپنے وفادار داخل کر دیے ہیں جنہوں نے ایک متوازی سیکیورٹی نظام قائم کر رکھا ہے۔

وزیر داخلہ لطفی بن جدو کا کہنا تھا کہ وہ محکمے کو سیاسی وابستگیوں سے پاک کرنے کے کوشش کر رہے ہیں مگر انہیں اس میں ناکامی کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے کیونکہ وزارت داخلہ کے زیر انتظام سیکیورٹی اداروں میں اپوزیشن کے حامی گھس چکے ہیں۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق وزیر داخلہ نے اپوزیشن کے سرکاری اداروں میں بڑھتے ہوئے اثرو رسوخ کی شکایت پارلیمنٹ کے اجلاس سے خطاب میں کی۔ انہوں نے کہا کہ "میرے محکمہ میں کئی افسران دوسری سیاسی جماعتوں سے ہمدردیاں رکھتے ہیں اور اپوزیشن کو وزارت داخلہ میں پنجے گاڑھنے کا موقع فراہم کر رہے ہیں۔ یہ لوگ سیکیورٹی اداروں میں اپنے وفادار بھرتی کر کے حکومت کے لیے پریشانی کا باعث بن رہے ہیں۔

وزیر داخلہ لطفی بن جدو کا کہنا تھا کہ ہمیں جب بھی کسی دوسری سیاسی جماعت کے وفادار کے بارے میں اطلاع ملتی ہے تو ہم اسے ہٹا دیتے ہیں، لیکن ہماری یہ کوششیں کامیاب ثابت نہیں ہوئی ہیں کیونکہ اپوزیشن جماعتیں اپنے وفاداروں کے ذریعے آہستہ آہستہ وزارت داخلہ میں قدم جمانے کی کوششیں کر رہی ہیں۔ انہوں نے اپوزیشن جماعتوں پر بھی زور دیا کہ وہ غیر جانب داری کا مظاہرہ کرتے ہوئے وزارت داخلہ کے معاملات میں دخل اندازی سے اجتناب کریں۔

خیال رہے کہ تیونس میں کچھ ہی عرصہ قبل اپوزیشن جماعتوں کی جانب سے یہی شکایت حکمران اسلام پسند جماعت "تحریک النہضہ" کے حوالے سے کی گئی تھی۔ اپوزیشن نے الزام عائد کیا تھا کہ حکمراں جماعت اعلیٰ سیکیورٹی عہدوں پر اپنے حامیوں کو تعینات کرکے اپوزیشن کی پرامن جدو جہد کو سبوتاژ کرنے کی سازش کر رہی ہے، تاہم النہضہ اور اس کی حکومت کی جانب سے ان الزامات کی سختی سےتردید کردی گئی تھی۔

حال ہی میں اپوزیشن کے ایک اہم رہ نما ریاض الرزقی نے اخبار"الصباح" کو انٹرویو میں کہا تھا کہ وزارت داخلہ میں 2011ء کے بعد سے 90 فی صد نئے افراد بھرتی کیے گئے ہیں۔ یہ بھرتیاں ہرسطح پر ہوئی ہیں۔ بھرتی ہونےوالوں کی اکثریت حکمراں جماعت النہضہ کے حامیوں کی بتائی جا رہی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں