امریکی کانگریس کے باہر فائرنگ، ایک خاتون ہلاک

واقعے کے بعد کانگریس کی عمارت عارضی طور پر سیل

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

امریکی دارالحکومت واشنگٹن میں پولیس نے ایک کار کا پیچھا کرتے ہوئے ڈرائیور کو گولی مار کر ہلاک کر دیا ہے۔ خاتون ڈرائیور نے پہلے وائٹ ہاؤس میں گھسنے کی کوشش کی تھی۔ گاڑی میں ایک بچہ بھی تھا۔

خاتون ڈرائیور نے کنیٹیکٹ نمبر پلیٹ کی اپنی کار وائٹ ہاؤس کے راستے کی رکاوٹیں توڑتے ہوئے آگے بڑھانے کی ناکام کوشش کی تھی۔ اس دوران ایک پولیس اہلکار گاڑی کی ٹکر لگنے سے زخمی ہو گیا۔ تاہم اس کی حالت خطرے سے باہر بتائی گئی ہے۔

بعدازاں پولیس نے اس کا پیچھا کیا تو وہ کانگریس کی جانب بڑھ رہی تھی۔ خبر رساں ادارے اے پی کے مطابق امریکی حکام اور عینی شاہدین نے بتایا ہے کہ کانگریس کے قریب ہی پولیس نے اسے گولی ماری جس کے نتیجے میں وہ ہلاک ہو گئی۔

اس وقت کانگریس میں امریکی حکومت کی بندش کا مسئلہ حل کرنے کے لیے ایک اجلاس جاری تھا۔ پولیس نے فوری طور پر کانگریس کی عمارت کو عارضی طور پر سیل کر دیا جبکہ کانگریس کے دونوں ایوانوں میں وقفہ ہو گیا۔

ری پبلکن رکنِ کانگریس مائیکل مکاؤل کا کہنا ہے کہ انہیں اس واقعے پر ہوم لینڈ سکیورٹی ڈیپارٹمنٹ نے بریفنگ دی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ خاتون ہلاک ہو گئی ہے۔ جب ان سے پوچھا گیا کہ کیا وہ خاتون مسلح تھی تو انہوں نے جواب دیا: ’’میرا نہیں خیال کہ وہ مسلح تھی۔ کوئی جوابی فائر نہیں ہوا تھا۔‘‘

پولیس کا کہنا ہے کہ اس واقعے سے دہشت گردی کی کارروائی کا اشارہ نہیں ملتا۔ ایک عینی شاہد میتھیو کورسن کا کہنا تھا: ’’مجھے ایسا لگا جیسے ڈرائیور گرفتاری دے دی گی۔ ایک پولیس اہلکار نے گَن نکال لی تھی۔ ڈرائیور گاڑی بھگانے کی کوشش کر رہی تھی۔ تب اس (پولیس اہلکار نے) نے گولیاں چلائیں۔‘‘

سینیٹ کے سکیورٹی آفیسر ٹیرنس گینر کا کہنا ہے کہ کار میں موجود بچے کو ہسپتال پہنچا دیا گیا جسے کوئی نقصان نہیں پہنچا۔ ایک عینی شاہد نے بتایا کہ بچہ دو سے تین سال کے درمیان دکھائی دیتا تھا۔ ڈیموکریٹ سینیٹر باب کیسی کانگریس کی عمارت سے نکل کر سڑک کی دوسری جانب دفاتر میں جا رہے تھےجب یہ واقعہ پیش آیا۔ انہوں نے بتایا: ’’میں نے تین، چار، پانچ گولیاں چلنے کی آوازیں سنیں۔‘‘

پولیس نے کیسی اور وہاں موجود دیگر لوگوں کو قریب ہی کھڑی ایک دوسری کار کے پیچھے چھپنے کے لیے کہا۔ بعد ازاں سب کو کانگریس کی عمارت میں بھیج دیا گیا۔ ابھی دو ہفتے قبل نیوی یارڈ کے ایک ملازم نے فائرنگ کر دی تھی۔ اس واقعے میں اس ملازم سمیت 13 افراد ہلاک ہو گئے تھے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں