جدید مواصلاتی آلات سے لیس غبارے کی مدد سے میدان عرفات کی نگرانی

حرمین کے لیے وائر لیس برقی وساؤنڈ سسٹم کی تیاری مکمل

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

سعودی عرب کی حکومت نے جہاں حجاج ومعتمرین کرام کو مناسک کی ادائیگی میں ہرممکن سہولت کی فراہمی کا بیڑا اٹھایا ہے وہیں اللہ کے ان مہمانوں کی دیکھ بھال اور ہنگامی امداد کے لیے پہلی مرتبہ جدید ترین مواصلاتی سائنسی آلات کے استعمال کا بھی فیصلہ کیا گیا ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق رواں موسم حج کے دوران وائرلیس مواصلاتی نظام اور"ایچ ڈی" کیمروں سے لیس غبارے کی مدد سے میدان عرفات میں حجاج کرام کی نگرانی کی جائے گی۔ الحرمین الشریفین کے نگراں ادارے کی جانب سے یہ ٹیکنالوجی پہلی باراستعمال کی جا رہی ہے۔ جدید مواصلاتی آلات سے مرصع غبارے کی تیاری میں شاہ عبدالعزیز سٹی آف سائنس وٹیکنالوجی کو سعودی ہلال احمر کی معاونت بھی حاصل تھی۔

ایک بیان میں سٹی آف سائنس وٹیکنالوجی کا کہنا ہے کہ غبارے کی تیاری کا مقصد جدید مواصلاتی وائرلیس سسٹم اور کیمروں کے ذریعے 200 میٹر کی بلندی سے میدان عرفات میں حجاج کرام کی نقل وحرکت پر نظر رکھی جائے گی۔ مواصلاتی وائرلیس غبارے سے حاصل ہونے والی ویڈیو فوٹیج اور تصاویرکی روشنی میں امدادی کارروائیاں کی جائیں گی۔ نیز انتظامیہ کو ہر قسم کے ہنگامی حالات سے نمٹنے میں مدد ملے گی۔ فضاء میں محو گردش غبارے میں نصب کیمرے فوری تصاویرارسال کریں گے۔ غبارے کی گردش اور حرکت سے کیمروں کی کارکردگی متاثر نہیں ہوگی۔

بیان میں بتایا گیا ہے کہ حکومت مسجد حرام اور مسجد نبوی میں "ساؤنڈ سسٹم" کو جدید تقاضوں سے ہم آہنگ کرنے کے لیے الحرمین الشریفین میں وائرلیس لاؤڈ اسپیکر اور دیگر آلات نصب کرنے کے ایک پروجیکٹ پرکام کر رہی ہے۔ الحرمین میں آواز اور تصاویر کے لیے نصب روایتی وائرنگ ساؤنڈ سسٹم کے باعث کئی قسم کی تکنیکی پیچیدگیوں کا سامنا رہتا ہے۔ متبادل نظام یہ شکایات بھی دور ہو جائیں گی۔ اس کےساتھ ساتھ الحرمین الشریفین میں روشنی کے موجودہ طریقہ کار اور "گائیڈز لائٹس" کا متبادل نظام بھی ڈویلپ کیا جا رہا ہے۔ جدید ٹیکنالوجی کی مدد سے مروجہ روشنی کے نظام کی جگہ برقی مواصلاتی لیزر لائٹ سسٹم نصب کیا جائے گا تا کہ حرمین کے اوپر اور آس پاس موجود تابکاری کے اثرات اور نقصان دہ بیکٹیریاز کو بھی ختم کیا جا سکے۔ روشنی کے جدید متبادل نظام سے نہ صرف روایتی پیچیدگیوں طریقوں سے چھٹکارا ملے گا بلکہ اسے بجلی کی بھی بچت ہوگی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں