سعودی خاتون جدہ ایوان صنعت وتجارت بورڈ کی رکنیت کی امیدوار

بورڈ کی 6 نشستوں کے لیے 63 امیدواروں کے درمیان مقابلہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی عرب میں مختلف شعبوں اور خاص طور پر صنعت وتجارت کے شعبے میں اس وقت کوئی بہت زیادہ خواتین اہم عہدوں پر فائز نہیں ہیں۔ایسے میں ایک باہمت خاتون رانیا سلامہ نے ایوان صنعت وتجارت جدہ کے بورڈ کی رکنیت کا انتخاب لڑرہی ہیں۔

رانیا سلامہ اس وقت جدہ چیمبر کی نوجوان کاروباری خواتین کی کمیٹی کی چئیرپرسن کی حیثیت سے خدمات انجام دے رہی ہیں۔ان کا کہنا ہے کہ وہ سعودی خواتین کو ان مواقع سے بھرپور فائدہ اٹھانے کے قابل بنانا چاہتی ہیں،جن سے اس وقت مرد حضرات فائدہ اٹھا رہے ہیں۔

انھوں نے العربیہ سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ''ہمیں اس وقت حقیقی طور پر خواتین اور مواقع کے درمیان خلیج کو پاٹنے کی ضرورت ہے۔اس ضمن میں ایوان صنعت وتجارت کو غیرمعمولی طور پر اپنا کردار ادا کرنا چاہیے''۔

انھوں نے اپنی کاروباری صلاحیت کا اظہار ؁ 2000ء میں ''عربیات میگزین'' کے نام سے آن لائن جریدے کے اجراء سے کیا تھا۔اس جریدے میں سماجی اور ثقافتی موضوعات پر تحریریں شائع ہوتی ہیں اور خواتین کی کاروباروں کے ضمن میں رہ نمائی کی جاتی ہے۔

سلامہ نے اپنی انتخابی مہم کے لیے تیار کردہ ویڈیو میں ووٹروں سے وعدہ کیا ہے کہ وہ کاروباری خدمات میں ٹیکنالوجی کے استعمال میں معاونت کریں گے اور سعودی کاروبار میں درپیش چیلنجز سے نمٹنے کے لیے سرکاری شعبے کے ساتھ شراکت کو مربوط بنائیں گی۔

جدہ چیمبرآف کامرس کے بورڈ کی بارہ نشستوں کے لیے تریسٹھ امیدوار میدان میں ہیں۔ان میں سے چھے کو انتخابات کے ذریعے منتخب کیا جائے گا اور چھے کو حکام نامزد کریں گے۔

اس صورت حال میں رانیا سلامہ کا اپنے حریف امیدواروں کے ساتھ سخت مقابلہ ہے اور ان کا انتخاب کوئی آسان نہیں ہوگا۔ان سے قبل ایک اور خاتون لاما السلیمان جدہ چیمبر کی دسمبر 2009ء میں نائب چئیروومن منتخب ہوئی تھیں اور وہ سعودی عرب کی تاریخ میں اس عہدے پر فائز ہونے والی پہلی خاتون تھیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں