شٹ ڈاون ختم کرنے کے لیے کانگریس تماشہ بند کرے: اوباما

امریکی صدر کا جذباتی انداز میں ایوان زیریں کے ارکان سے مطالبہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

امریکی صدر براک اوباما نے امریکی کانگریس کے ایوان زیریں سے کہا ہے کہ مالی بحران کو جنم دینے والے '' تماشے کو بند کیا جائے تاکہ امریکی انتظامیہ کے وفاقی اداروں کا شٹ داون ختم ہو اور بجٹ کی منظوری ممکن ہو سکے۔'' صدر اوباما نے اس امر کا اظہار ریڈیو سے اپنے ہفتہ وار خطاب کے دوران کیا ہے۔

واضح رہے امریکی ایوان نمائندگان جس میں اپوزیشن جماعت ری پبلکن کی عددی قوت زیادہ ہے اور ری پبلکن ارکان کے عدم تعاون کے باعث امریکی حکومت کو عملا ایک مالی بحران کا سامنا ہے ۔ اس صورت حال کی وجہ سے امریکا کے آٹھ لاکھ شہری فوری طور پر بےکاری کا شکار ہو گئے ہیں۔

دوسری جانب امریکی سینیٹ بجٹ کی پہلے ہی منظوری دے چکا ہے۔ حالیہ ہفتوں میں یہ دوسرا موقع ہے جب اوباما انتظامیہ کو کانگریس کے غیر معمولی کردار کے ہاتھوں پریشانی کا سامنا ہے۔ اس سے پہلے شام میں کیمیائی ہتھیاروں کے معاملے میں بھی امریکی کانگریس نے اوباما انتظامیہ کو ''بلینک چیک'' دینے کا اشاراہ نہیں دیا تھا۔

صدر اباما نے پچھلے ہفتے سے جاری شٹ ڈاون کے خاتمے میں مدد دینے کیلیے نسبتا جذباتی انداز میں ایوان زیریں کے ارکان کو مخاطب کیا ہے۔ لیکن امریکی ری پبلکن پارٹی نے ابھی تک سپیکر جان بوہنر کو بل کی منظوری دینے یا نہ دینے کی واضح ہدایت نہیں کی ہے۔

امریکی صدر کا کہنا تھا '' میں اس کے لیے تاوان ادا نہیں کرونگا کہ امریکی حکومت کے بند ہونے والے ادارے دوبارہ کھل جائیں۔''
واضح رہے امریکی حکومت کو سترہ اکتوبر کو اپنی قرضوں کی مدت کے حوالے سے ایک اور چیلنج درپیش ہو گا اس سلسلے میں بھی اسے کانگریس کا تعاون درکار ہو گا۔

صدر اوباما نے کہا '' شٹ ڈاون کے حوالے سے جاری ڈرامائی عمل دیوالیہ ہونے تک لے جا سکتا ہے۔'' ان کا کہنا تھا وہ ملکی معیشت کے لیے کسی بھی فرد یا جماعت کے ساتھ ملنے اور کام کرنے کو تیار ہیں۔''

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں