.

حج کے موقع پر 10 ملین مکعب میٹر پانی کی کھپت کا امکان

یومیہ 02 لاکھ مکعب میٹرپانی ذخیرہ کیا جا رہا ہے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی نیشنل واٹرسپلائی کمپنی کی جانب سے بتایا گیا ہے کہ رواں موسم حج کے دوران 10 ملین مکعب میٹر پانی کی کھپت کا امکان ہے۔ صاف پانی کی ضروریات کے پیش نظر کمپنی یومیہ دو لاکھ مکعب میٹر پانی ذخیرہ کر رہی ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق سعودی واٹرسپلائی کے بیان میں بتایا گیا ہے کہ کمپنی نے حجاج کرام کی پانی ضرورت پوری کرنے کے لیے ہنگامی پلان ترتیب دیا ہے۔ کھپت کے پیش نظر پہلے پانی کی بڑی مقدار یومیہ کی بنیاد پر اہم مقامات اور مشاعر میں ذخیرہ کی جا رہی ہے۔ کمپنی روزانہ تقریبا دو لاکھ مکعب میٹر پانی مختلف ٹینکروں کے ذریعے ذخیرہ کر رہی ہے۔ اس کے باوجود اگر پانی کا بحران پیدا ہوا تو اسے حل کرنے کے لیے "اسٹریٹیجک واٹر اسٹوریج" سے مدد لی جائے گی۔

واٹر سپلائی کمپنی کا کہنا ہے کہ ماضی میں فی کس پانی کے استعمال کا کوئی اندازہ نہیں لگایا جاتا تھا لیکن اب پانی ذخیرہ کرنے اور اس کے استعمال کا اندازہ لگانے کے لیے جدید ترین سائنسی آلات اور پیمانوں کا استعمال کیا جا رہا ہے۔ پانی کی تقسیم اور پائپ لائنوں میں اس کی سپلائی کے لیے"اسکاڈا" نامی جدید سسٹم کا استعمال کیا جا رہا ہے، جس سے نہ صرف پانی ضائع ہونے سے محفوظ رہے گا بلکہ حجاج کی پانی ضرورت بھی بروقت پوری ہوگی۔

خیال رہے کہ مکہ مکرمہ میں مشاعر مقدسہ کے لیے بچھائی گئی پائپ لائنیں 763 میٹر طویل ہیں۔ منیٰ کی سیوریج لائن 84 ہزار میٹر لمبی ہے، جو دیگر تمام مشاعر کی سیوریج لائنوں میں سب سے لمبی پائپ لائن ہے۔