کیمیائی ہتھیاروں کی تلفی سے نمٹنے کے طریقے، روس امریکا اتفاق

روس عالمی ماہرین کو معاونت دینے کو بھی تیار ہے: ولادی میر پیوٹن

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

امریکا اور روس کے درمیان شام کے کیمیائی ہتھیاروں کی تلفی کے طریقہ کار پر اتفاق ہو گیا ہے۔ اس امر کا اعلان ایشیا پیسفک کے رکن ممالک کی تجارت و معیشت کے حوالے سے سالانہ کانفرنس کے دوران روسی صدر ولادی میر کے ساتھ امریکی وزیر خارجہ جان کیری کی ملاقات کے بعد روسی صدر نے میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کیا ہے۔

ولادی میر کا کہنا تھا '' دونوں ملک مشترکہ طور پر اس چیز کو سمجھتے ہیں کہ کیمیائی ہتھیاروں کی تلفی کے لیے کیا کیا جانا چاہیے اور کس طرح کیا جانا چاہیے۔''

روس کے صدر کا کہنا تھا ''مجھے خوشی ہے کہ صدر اوباما کیمیائی ہتھیاروں کے معاملے کو مکمل انداز میں دیکھ رہے ہیں جبکہ عالمی ماہرین کیمیائی ہتھیاروں کی تصدیق اور تلفی کے لیے رواں ماہ شروع سے شام پہنچ چکے ہیں۔''

شام کے سب سے بڑے اور دیرینہ اتحادی روس کے صدر نے اس موقع پر بتایا روس نے یہ پیش کش بھی کر رکھی ہے کہ اس کے ماہرین عالمی معائنہ کاروں کو معاونت دینے کو تیار ہیں۔'' ان کے خیال میں ''ماہرین کو شام کے کیمیائی ہتھیاروں سے نمٹنے کیلیے ایک سال کا عرصہ درکار ہو سکتا ہے۔''

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں