.

فرانسیسی قونصل جنرل کا مقدس مقامات میں موٹر سائیکل پر گشت

اقدام کا مقصد اپنے ملک کے حجاج کرام کی خدمت کرنا ہے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب میں تعینات فرانسیسی قونصل جنرل ڈاکٹر لوئیس پلین نے مناسک حج کے دوران مقدس مقامات [منیٰ، مزدلفہ اور عرفات] میں حجاج کی خدمت کے لیے موٹرسائیکل پرگشت کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق فرانسیسی سفارت کارنے ترکی، یورپی یونین، امریکا اورآسٹریلیا کے حجاج کرام کی دیکھ بحال میں سرگرم تنظیم کے سربراہ طارق العنقاوی سے ملاقات کی۔ اس ملاقات میں انہوں نے غیرملکی خصوصا یورپی اور فرانسیسی حجاج کرام کو درپیش مشکلات کے بارے میں معلومات حاصل کیں۔ ڈاکٹر لوئس نے کہا کہ وہ خود بھی اپنے ملک کے حجاج کرام کی خدمت اور ان کی ضروریات پوری کرنے کے لیے مقدس مقامات میں موجود ہیں اور موٹرسائیکل پرگشت کرتے رہیں گے۔ خیال رہے کہ فرانس سے اس سال بیس ہزار فرزندان توحید حج کے لیے دیار مقدس پہنچ چکے ہیں۔ڈاکٹرلوئیس نے بتایا کہ گذشتہ برس سعودی عرب کی جانب سے فرانسیسی مسلمانوں کوحج اورعمرے کے چالیس ہزار ویزے جاری کیے تھے، تاہم رواں سال مسجد حرام کی توسیع کے باعث حج ویزوں میں بیس فی صد کمی کردی گئی ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ یورپی ممالک میں مسلمانوں کی تعداد چار ملین سے تجاوز کرچکی ہے۔ ان میں اکثریت وہاں کے مقامی مسلمان باشندوں کی ہے۔ کچھ عرب اورغیر فرانسیسی مسلمان بھی شہریت حاصل کرنے کے بعد وہاں رہ رہےہیں۔ ان میں افریقی ممالک اور مغرب اسلامی کے مسلمان باشندے بھی شامل ہیں۔

فرانسیسی قونصل جنرل کا کہنا تھا کہ حج کے لیے دیار مقدسہ روانگی سے قبل عازمین کو باقاعدہ ایک تربیتی ورکشاپ سے گذارا جاتا ہے جس میں انہیں حج کے موقع پر اپنی اور دوسروں کی ہنگامی مدد کے طریقہ کار اور مناسک حج کی ادائی کے طریقے بتائے جاتے ہیں