.

دبئی میں "اسمارٹ مسافر" نامی خودکار پاسپورٹ کنڑول سسٹم کا آغاز

"اسمارٹ گیٹ" سے تین لاکھ 40 ہزار مسافر استفادہ کر چکے ہیں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

متحدہ عرب امارات کی حکومت نے دبئی کے بین الاقوامی ہوائی اڈے پر پاسپورٹ کنٹرول ڈیسک پرمسافروں کی سہولت کے لیے عملے کے بغیر"اسمارٹ مسافر " نظام متعارف کرایا ہے۔

تارکین وطن اور اقامت سے متعلق محکمے نے ایک بیان میں بتایا ہے کہ حکومت پاسپورٹ کنڑول کاٶنٹر پر عملے کا متبادل "اسمارٹ مسافر" خود کار نظام نصب کرنے کے ایک پراجیکٹ پرکام کر رہی ہے، جس کا ابتدائی تجربہ دبئی انٹرنیشنل ایئر پورٹ پر"اسمارٹ مسافر گیٹ" کی شکل میں کیا جا چکا ہے۔ اس نئے نظام کی سہولت ملنے کے بعد پاسپورٹ کنٹرول میں دفتری اہلکاروں کی ضرورت نہیں رہے گی اور کوئی بھی مسافر اس نظام کے ذریعے پاسپورٹ کی تمام ضروری کارروائی مکمل کرا سکے گا۔

"اسمارٹ مسافر" سسٹم کا اعلان دبئی میں جاری "جائٹیکس ٹیکنالوجی نمائش برائے 2013ء" کے دوران کیا گیا۔ اس نمائش میں پانچ نئی آن لائن سروسز کا بھی اعلان کیا جا رہا ہے جس کے بعد اسمارٹ فونز بالخصوص "ایپل" ، "انڈرائیڈ" اور دیگر اسمارٹ سروسز کی تعداد 18 ہو جائے گی۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کےمطابق دبئی ڈائریکٹوریٹ جنرل برائے ایمیگریشن و ریزیڈنسی امور کے ڈائریکٹرمیجر جنرل محمد احمد المری نے "GITEX" نمائش کے موقع پر ایک نیوز کانفرنس میں بتایا کہ "اسمارٹ مسافر" سسٹم کا آغاز دبئی کے بین الاقوامی ہوائی اڈے کے داخلی دروازوں پر کیا گیا، جہاں رواں سال کے دوران اس سسٹم سے اب تک کم سے کم تین لاکھ چالیس ہزار مسافر استفادہ کر چکے ہیں۔

ایک سوال کے جواب میں دبئی ڈائریکٹوریٹ جنرل برائے اقامتی امور کے سربراہ نے کہا کہ حکومت عالمی اہمیت کے حامل شہر میں تمام دفاتر کو کمپیوٹرائز کرنے کے ساتھ ساتھ ان میں جدید ٹیکنالوجی متعارف کرا رہی ہے۔ اس سلسلے میں رواں سال کے اختتام تک ایسی سروسز کی تعداد اٹھارہ ہو جائے گی۔ ان میں اسمارٹ گیٹ سسٹم کا آغاز رواں سال کے شروع میں ہوچکا ہے۔

علاوہ ازیں دبئی میں اقامت اختیار کرنے والے غیرملکی شہریوں کی معلومات کے لیے"ساعد" الیکٹرونک سسٹم متعارف کرایا جا رہا ہے۔ اسمارٹ فون سروسز کے ساتھ "اسمارٹ ٹی وی کمانڈر" کے نام سے ایک نئی سروس فراہم کی جا رہی ہے جس کے ذریعے دبئی میں مقیم کوئی بھی شخص اپنے اسمارٹ فون پر کوئی بھی اخبار یا ٹیلی ویژن چینل کی براؤزنگ کرسکے گا۔

"اسمارٹ مسافر" سسٹم کے بارے میں پوچھے گئے ایک سوال کے جواب میں میجر جنرل محمد احمد المری نے بتایا کہ یہ دفتری اہلکار کا ایک متبادل نظام ہے جو دبئی اڈے پر مسافروں کی آمد واخراج میں مدد فراہم کرنے کے ساتھ انہیں پاسپورٹ سے متعلق ضروری معلومات بھی فراہم کرے گا۔ اسی مقصد کے لیے دبئی ہوائے اڈے کے ٹرمینل تھری میں 28 الیکٹرانک گیٹ اور 14 کاؤنٹرز بنائے گئے ہیں، جہاں ایک مسافرکے تمام ضروری کوائف کی جانچ پڑتال میں زیادہ سے زیادہ بیس سیکنڈ لگیں گے۔ یہی نظام ہوائی اڈے کی پہلی اور دوسری بلڈنگ میں بھی متعارف کرانے کے لیے کام جاری ہے۔