تیونس: کیف میں حکمراں اسلامی جماعت النہضہ کا دفتر نذرآتش

عمارت کی بیرونی دیواریں جل گئیں ،دفتر میں پڑا سامان تباہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

تیونس کے شہر کیف میں مشتعل مظاہرین نے حکمراں اسلامی جماعت النہضہ کے دفتر کو نذرآتش کردیا ہے۔

عینی شاہدین کے مطابق مظاہرین نے جمعرات کی صبح دفتر کوآگ لگادی جس سے عمارت کی بیرونی دیواریں جل گئی ہیں اور دفتر کے اندر پڑے تمام آلات بھی تباہ ہوگئے ہیں۔

مظاہرین نے دفتر کی تباہ شدہ چیزیں عمارت کے باہر سڑک پر پھینک دیں۔وہ گذشتہ روز جنوبی شہر سیدی بوزید میں اسلامی جنگجوؤں کے ساتھ جھڑپ میں سات پولیس اہلکاروں کی ہلاکت کے خلاف احتجاج کررہے تھے۔ النہضہ کا علاقائی دفتر ان مسلح جہادیوں کے ساتھ جھڑپ میں مارے گئے پولیس اہلکاروں میں سے ایک کے خاندان کے مکان کے نزدیک واقع تھا۔

النہضہ کے دفتر پر یہ حملہ ایسے وقت میں کیا گیا ہے جب دارالحکومت تیونس میں حزب اختلاف کا اتحاد حکومت کے خلاف نئے مظاہروں کی تیاری کررہا تھا۔حزب اختلاف کا اتحاد النہضہ کی حکومت سے مستعفی ہونے کا مطالبہ کررہا ہے اور اس نے گذشتہ روز بھی تیونس کے بورقیبہ چوک میں مظاہرہ کیا تھا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں