''چار انگلیاں'' مصری کنگ فو ایسوسی ایشن ناراض، چمپئین انعام سے محروم

مصری چمپئین محمد یوسف، عالمی چمپئِن شپ میں نمائندگی سے بھی فارغ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

ماسکو میں مصر سے تعلق رکھنے والے کنگ فو کے چمپئین محمد یوسف کو اس وقت جیتی ہوئی چمپئین شپ کا انعام لینے سے مصری حکام نے روک دیا جب مصر کے اس نامور کھلاڑی نے انعام حاصل کرنے سے پہلے چار اگلیوں والی شرٹ زیب تن کر لی جو مسجد رابعہ العدوایہ میں جاں بحق ہونےوالے سینکڑوں مظاہرین کے نشان سے منسوب ہے۔

مصر اور دنیا بھر میں 14 اگست کے بعد اس نشان کی تصاویر اور دیگر چیزوں کو مصری سکیورٹی فورسز کے ہاتھوں مسجد رابعہ العدوایہ میں مارے جانے والے سینکڑوں مظاہرین کے ساتھ ہمدردی کے طور پر پہچانا جاتا ہے جو مصر میں جمہوریت کا مطالبہ کرتے ہوئے مارے گئے تھے۔

''العربیہ '' کے مطابق مصری کنگ فو ایسوسی ایشن کے ایگزیکٹو آفیسر جمال الضرار کے محمد یوسف کے جلد روس سے واپس بھیجا جا رہا ہے۔ یہ فیصلہ یوسف کی ربع کے نشان والی شرٹ اور رویے کی وجہ سے کیا گیا ہے۔

یہ بھی بتایا گیا ہے کہ محمد یوسف پر ایک سیاسی جماعت سے منسوب نشان استعمال کرنے کی وجہ سے آئندہ کنگ فو کے میدان میں مصر کی نمائندگی کرنے اور کھیلنے پربھی پابندی عاِئد کر دی گئی ہے۔ اس واقعے سے پہلے کے فیصلے کے تحت محمد یوسف کو 27 نومبر کو کنگ فو کی عالمی چمپئین شپ میں مصر کی نمائندگی کرنا تھی۔

واضح رہے ہاتھ کی چار انگلیوں کا نشان پوری دنیا میں مسجد رابعہ العدوایہ میں جاں بحق ہونے والوں کی یاد دلاتا ہے، جس سے مصری فوج اور عبوری حکومت کی مبینہ طور پر بدنامی ہوتی ہے۔

محمد یوسف نے روس میں کنگ فو چمپئین شپ جیتی ہے اور اب اسے گولڈ میڈل حاصل کرنا تھا۔ اس واقعے کے کی توثیق کنگ فو کی عالمی تنظیم سے ہونا ضروری ہے یا نہیں ابھی اس بارے میں کوئی مصدقہ اطلاعات سامنے نہیں آئی ہیں، تاہم انسانی حقوق کی تنظیموں کے لیے یہ ایک دلچسپ ایشو بن گیا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں