.

امریکا:لاس اینجلس کے ہوائی اڈے پرفائرنگ،ایک ہلاک ،دوافراد زخمی

پروازوں کی آمدورفت عارضی معطل،دوسرے شہروں میں بھی فضائی ٹریفک متاثر

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکا کے شہر لاس اینجلس کے بین الاقوامی ہوائی اڈے پرخودکار ہتھیار سے مسلح شخص نے جمعہ کو فائرنگ کردی ہے جس کے نتیجے میں وفاقی سکیورٹی ایجنسی کا ایک اہلکار ہلاک اور دو افراد زخمی ہوگئِے ہیں۔

العربیہ کے نمائندے کی اطلاع کے مطابق فائرنگ کا یہ واقعہ لاس اینجلس کے بین الاقوامی ہوائی اڈے کے ٹرمینل نمبر 3 پر پیش آیا ہے اور وہاں ایک مسلح شخص کا وفاقی سکیورٹی ایجنسی کے اہلکاروں کے ساتھ فائرنگ کا تبادلہ ہوا ہے۔امریکی حکام نے ایک اہلکار کی تصدیق کی ہے۔

ایک پولیس افسر کا کہنا ہے کہ زخمیوں کی حالت کے بارے میں کچھ معلوم نہیں ہے۔ٹیلی ویژن کی فوٹیج میں تین زخمی افراد میں سے دو کو وہیل چئیر پر بٹھا کر ٹرمینل سے باہر لے جاتے ہوئے دکھایا گیا ہے۔

ریاست کیلی فورنیا کے مقامی میڈیا نے بتایا کہ قانون نافذ کرنے والے اداروں کے اہلکاروں نے ایک بندوق بردار شخص کو گولی ماردی ہے۔امریکی خبررساں ادارے ایسوسی ایٹڈ پریس کی اطلاع کے مطابق فائرنگ کرنے والے مسلح شخص کو زخمی حالت میں حراست میں لے لیا گیا ہے۔فوری طور پر یہ معلوم نہیں ہوسکا کہ اس نے فائرنگ کیوں کی ہے اور ائیرپورٹ میں اسلحے سمیت کیسے گھسنے میں کامیاب ہو گیا ہے۔

لاس اینجلس ائیرپورٹ کی خاتون ترجمان کیتھرین الواراڈو نے ایک بیان میں کہا ہے کہ فائرنگ کے بعد ہوائی اڈے سے روانہ ہونے اور آنے والی تمام پروازوں کوعارضی طور پر معطل کردیا گیا ہے۔اس واقعے سے امریکا کے دوسرے شہروں میں بھی پروازیں متاثر ہوئی ہیں اور وہاں سے لاس اینجلس آنے والی پروازوں کو عارضی طور پر روک لیا گیا ہے۔

ایک عینی شاہد نے بتایا ہے کہ اس نے ٹرمینل کے سکیورٹی گیٹ کے اندر سے کوئی درجن بھر گولیاں چلنے کی آوازیں سنی ہیں۔اس کے فوری بعد ائیرپورٹ کے سکیورٹی اسٹاف نے ٹرمینلز کو خالی کروا لیا۔اس وقت سیکڑوں مسافر طیاروں کے آس پاس کھڑے تھے۔انھیں بعد میں ریستوراں میں بند کردیا گیا۔