.

امارات ایئرلائن" بہترین سروس قرار، اسرائیلی فضائی کمپنی بلیک لسٹ

ہوائی جہازوں سے متاثرہ آبادی میں شرح اموات میں اضافہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

برطانیہ کے سب سے بڑے اور مصروف بین الاقوامی ہوائی اڈے "ہیتھرو" کی انتظامیہ کی جانب انسان دوست اور آبادی کے لیے پریشانی کا موجب بننے والی بین الاقوامی فضائی کمپنیوں کی الگ الگ فہرستیں مرتب کی ہیں۔ فہرست کے مطابق متحدہ عرب امارات کی"امارات ائیرلائن" کو ماحول اور انسان دوست قرار دیتے ہوئے اسے بہترین فضائی سروس قرار دیا گیا ہے جبکہ آبادی کے لیے پریشانی کا باعث بننے والی فضائی کمپنیوں کی فہرست میں اسرائیل کی "العال" ائر ویز پہلے نمبر پر ہے۔

العربیہ ڈات نیٹ کےمطابق ہیتھرو ایئرپورٹ کی جانب سے "امارات ائر لائن" کو بہترین اورانسان دوست سروس قرار دینا اعزاز کی بات ہے کیونکہ ہھیترو ہوائے اڈے پر دنیا کی بہترین فضائی کمپنیوں کے ہوائی جہاز بھی اترتے اور اڑانے بھرتے ہیں جن میں "امریکن ایئرلائنز" اور خود برطانیہ کی "برٹش ایئرویز" جیسی معیاری کمپنیاں بھی شامل ہیں۔

رپورٹ کے مطابق ہیتھرو انتظامیہ کو جنوبی لندن بالخصوص ہوائی اڈے کے قرب وجوار میں موجود آبادی کی جانب سے فضائی کمپنیوں کے خلاف بڑے پیمانے پر شکایات موصول ہو رہی تھیں۔ ہوائی اڈے کے قریب کم وبیش تین ملین آبادی جہازوں کی آمد و رفت کے باعث متاثرہو رہی ہے۔ شہری آبادی کے لیے ہوائی جہازوں کی بے ہنگم اندازمیں آبادی کے اوپر پروازیں اور ان کا شور شرابہ شہریوں کے لیے سخت پریشانی کا باعث بن رہا ہے۔

ہیتھرو انتظامیہ نے تین ماہ کے دوران مختلف ملکوں کے ہوائی جہازوں کی آمد ورفت کا جائزہ لیا اور شہریوں کے لیے تکلیف کا باعث بننے والی فضائی کمپنیوں کی فہرست مرتب کی۔ اس فہرست کے مطابق اسرائیل کی "العال" ائیرلائن سب سے زیادہ تکلیف دہ قرار دی گئی ہے۔ اس کے علاوہ ترک ایئرویز اور تھائی ایئر لائنز بھی اسی فہرست میں دوسرے اور تیسرے نمبر پرآتی ہیں۔ امریکا اوربعض دوسرے ملکوں کی فضائی سروسز شہریوں کے لیے کم پریشانی کا باعث بنتی ہیں، جبکہ بہترین فضائی سروس میں متحدہ عرب امارات کا نام پہلے نمبر پر ہے۔

ہوائی جہازوں کے شور کے باعث شہریوں پر پڑنے والے منفی اثرات کا بھی جائزہ لیا گیا ہے۔ لندن میں سائنس اسٹڈی سینٹرکے زیراہتمام کی جانے والی ایک طبی تحقیق میں بتایا گیا ہے کہ ہوائی اڈے کے قریب واقع آبادی پر ہوائی جہازوں کی آمدورفت سے گہرے اور منفی اثرات مرتب ہو رہے ہیں۔ متاثرہ شہریوں میں دماغی فالج اور اچانک فشار خون بڑھ جانے کے امراض پیدا ہوتے ہیں جو بسا اوقات جان لیوا ثابت ہوتےہیں۔ یہی وجہ ہے کہ ہیتھرو ہوائے اڈے سے متاثرہ علاقوں میں غیر طبعی اموات کی شرح دوسرے علاقوں کی نسبت زیادہ ہو چکی ہے۔

ہیتھرو انتظامیہ کا کہنا ہے کہ بہتراوربدترسروسزکی فہرست تیار کرنے کا مقصد کسی ملک کو بدنام کرنا نہیں بلکہ اس کا مقصد فضائی سروس کے معیار کو بہتر بنانے کی جانب ان کی توجہ مبذول کرانا ہے تاکہ فضائی سروس کو انسان اور ماحول دوست بنایا جا سکے۔

رپورٹ کے مطابق مختلف فضائی کمپنیوں کے زیراستعمال پرانے طیارے خاص طور پرچار انجن والےبوئنگ747 زیادہ آواز پیدا کرنے کے باعث پریشانی کا موجب بنتے ہیں جبکہA380 طرز کے طیارے لینڈنگ اور ٹیک آف کے دوران کم تکلیف دہ سمجھے جاتے ہیں۔