.

یمنی دارالحکومت میں موٹر سائیکل سواری پر پابندی عائد

فیصلے کا مقصد قومی مذاکرات کے لئے پر سکون ماحول کی فراہمی ہے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمن میں حکومت اور اپوزیشن کے درمیان جاری مفاہمتی بات چیت کے دوران ماحول کو پر سکون رکھنے کے لیے دارالحکومت صنعاء میں یکم سے 15 دسمبر تک موٹر سائیکل سواری پر پابندی عائد کردی گئی ہے۔

وزارت داخلہ کی جانب سے جاری ایک بیان میں بتایا گیا ہے کہ موٹر سائیکل سواری پر پابندی کا مقصد شہر میں امن وامان کے قیام کے ساتھ ساتھ حکومت اور اپوزیشن کے درمیان جاری مفاہمتی بات چیت کو کامیاب بنانا ہے۔ حکومت کی جانب سے صنعاء میں کسی نا خوشگوار واقعے کی روک تھام کے لیے پندرہ دسمبر تک موٹر سائیکل سواری پر پابندی عائد کر دی ہے تاکہ تخریب کاری میں ملوث عناصر کو کسی واردات کے بعد موٹر سائیکل پر فرار کا موقع نہ مل سکے۔

خیال رہے کہ صنعاء کی سڑکوں پر موٹر سائیکل سواروں کا ھجوم رہتا ہے۔ ماضی میں بھی پولیس کی جانب سے موٹر سائیکل سواری پر پابندی عائد کی جاتی رہی ہے۔ تاہم پولیس کی پابندیوں کے علی الرغم شہریوں کی جانب سے اس کی خلاف ورزی کے واقعات بھی بکثرت دیکھے جاتے رہے ہیں۔

فرانسیسی خبر رساں ایجنسی"اے ایف پی" کے مطابق موٹر سائیکل سواری پر پابندی کے اعلان کے بعد سیکڑوں افراد نے صنعاء میں ایوان صدر کے باہر پابندی کے خلاف احتجاجی مظاہرہ کیا۔ پولیس نے موٹر سائیکل سواری پر پابندی کے مخالف شہریوں کو منتشر کرنے کے لیے ان پر اشک آور گیس کے شیل فائر کئے اور لاٹھی چارج کیا۔

خیال رہے یمن میں حکومت اور اپوزیشن کے مابین نئے آئین کی تیاری اور سنہ 2014ء میں ہونے والے پارلیمانی انتخابات کے حوالے سے مشاورتی اجلاس جاری ہیں۔