اخوان کی حمایت یافتہ ڈاکٹر ایسوسی ایشن کوانتخابات میں شکست

30 جون کے انقلاب کے بعد اخوان کی پہلی سیاسی ناکامی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

مصر میں میڈیکل ایسوسی ایشن کے وسط مدتی انتخابات کے غیر حتمی اور غیر سرکاری نتائج سامنے آ گئے ہیں۔ نتائج کے مطابق اخوان المسلمون کی حمایت یافتہ پینل کو تیس عشروں بعد پہلی مرتبہ بدترین شکست کا سامنا کرنا پڑا ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق میڈیکل ایسوسی ایشن کی ملک بھر کی مجموعی طور پر 24 نشستوں میں سے سول سوسائٹی کے حمایت یافتہ "استقلال" گروپ نے 15 سیٹوں پر کامیابی حاصل کر لی جبکہ اخوان المسلمون کے حامی"ڈاکٹر برائے مصر" کو صرف ایک سیٹ مل سکی ہے۔ البتہ بعض اضلاع میں جماعت کے حمایت یافتہ امیدواروں کو 75 فی صد ووٹ ملے ہیں، جن کی گنتی جاری ہے۔

مبصرین کا خیال ہے کہ مصر کی میڈیکل ایسوسی ایشن پر گذشتہ اٹھائیس سال تک اخوان المسلمون کی اجارہ داری رہی ہے، لیکن اخوان کو اس تنظیم میں پہلی مرتبہ بدترین شکست کا سامنا کرنا پڑا ہے۔ جماعت کی کسی ذیلی تنظیم کے انتخابات میں شکست اس کی مستقل کی عوامی سیاسی حمایت کے لیے اہم قرار دی جا سکتی ہے۔

اخبار "الاھرام" کی رپورٹ کے مطابق گذشتہ روز ملک بھر میں ہوئے میڈیکل ایسوسی ایشن کے وسط مدتی انتخابات میں "استقلال" گروپ کو مجموعی طور پر پندرہ نشستیں حاصل ہوئی ہیں۔ قاہرہ، اسکندریہ، المنیا، اسیوط، اسماعیلیہ، بنی سویف، مرسی مطروح، اسوان، نہر سویز اور قنا میں استقلال گروپ نے کلین سویپ کیا جبکہ الجیزہ، البحیرہ، قلیوبیہ، الفیوم، نیو ویلی اور کفر الشیخ میں اخوان کے حامیوں کو 75 فی صد ووٹ حاصل ہوئے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں