مدینہ منورہ اسلامی دنیا کا ثقافتی دارالحکومت قرار، جشن کی تیاریاں

آئندہ ہفتے مختلف ثقافتی نمائشوں اور تقریبات کا انعقاد کیا جائے گا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی عرب کے شہر مدینہ منورہ کو اسلامی تعاون تنظیم "او آئی سی" کے ادارہ برائے سائنس، تعلیم و ثقافت "آئسیسکو" نے سال 2013ء کے دوران اسلامی دنیا کا ثقافتی دارالحکومت قرار دیا ہے۔

مدینہ طیبہ کوعالمی ادارے کی جانب سے یہ اعزاز ملنے کے بعد اسلامی ثقافت کے پہلوؤں کو نمایاں کرنے کے لیے آئندہ ہفتے شہر میں ایک بڑے ثقافتی میلے کا اہتمام کیا جا رہا ہے۔ اس میلے میں عالم اسلام سمیت دنیا کے دیگر خطوں سے بھی شائقین کی بڑی تعداد شرکت کرے گی۔

مدینہ منورہ کو اسلامی ثقافت کا دارالحکومت برائے 2013ء قرار دینے میں اسلامی یونیورسٹی مدینہ منورہ کا بھرپور تعاون حاصل رہا ہے۔ اگلے ہفتے منعقد ہونے والے ثقافتی میلے کو یونیورسٹی کی جانب سے" اقوام کی تہذیب وثقافت برائے طلباء جامعہ اسلامیہ" کا عنوان اس لیے دیا گیا ہے کیونکہ یونیورسٹی میں مختلف اقوام کی نمائندگی کرنے والے طلباء کی بڑی تعداد زیور تعلیم کے حصول کے لیے کوشاں ہے۔

رواں اسلامی مہینے [صفر المظفر] کی 15 تاریخ بروز بدھ کو ثقافتی سرگرمیوں کے ضمن میں"مدینہ منورہ بطور اسلامی ثقافت کا دارالحکومت اور عربی زبان کا عالمی دن" کے نام سے ایک علمی اور سائنسی میلے کا انعقاد کیا جائے گا۔ شہر میں ہونے والے میلے کے علاوہ مڈل اور ہائی اسکولوں میں بھی اسی نوعیت کے چھوٹے چھوٹے ثقافتی پروگرامات منعقد کرائے جائیں گے۔

سعودی عرب کی خبر رساں ایجنسی" واس" کے مطابق مدینہ منورہ میں ثقافتی سرگرمیوں کے ضمن میں "سیرت النبی، مدینہ منورہ کی تاریخ اور دیگر موضوعات پر اسلامی یونیورسٹی میں خصوصی لیکچرز کا بھی اہتمام کیا گیا ہے۔ اس کے علاوہ ثقافتی سرگرمیوں میں تین الگ الگ نمائشوں کا اہتمام بھی شامل ہے۔

"نمائش محمد رسول اللہ"، مسجد نبوی کی مغربی سمت میں، نمائش اسماء الحسنیٰ اور ایک نمائش تاریخی جامع مسجد قباء میں بھی پیش کی جائے گی۔ مدینہ منورہ کی ہفتہ ثقافت کی متعلق سرگرمیوں سے متعلق ریڈیو اور ٹیلی ویژن چینلوں پر خصوصی پروگرامات اور رپورٹس بھی نشر کی جائیں گی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں