کیمیائی ہتھیاروں کی تلفی، اٹلی کی بندرگاہ استعمال ہو گی

اٹلی کی سرزمین کو کیمیائی ہتھیار نہیں چھو سکیں گے: وزارت خارجہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

اٹلی نے شام کے کیمیائی ہتھیاروں کی تلفی کی خاطر سمندر میں منتقلی ممکن بنانے کیلیے اپنی بندرگاہ استعمال کرنے کی اجازت دے دی ہے۔

شام سارین گیس کی تیاری میں کام آنے والی ٹاکسن حوالے کرنے والا ہے۔ وی ایکس گیس اور دوسرے مہلک کیمیکلز ایک خصوصی طور پر تیار کیے گئے بحری جہازکے ذریعے تلف کیے جانے کا منصوبہ ہے۔

منصوبے کے مطابق ناروے اور ڈنمارک کے بحری جہاز شام کی بندرگاہ لتاکیہ سے کیمیائی ہتھیار حاصل کریں گے، جہاں سے انہیں امریکی جہاز میں منتقل کیا جائے گا۔ تاہم ابھی یہ واضح نہیں ہے کہ ناروے اور ڈنمارک کے جہازوں سے امریکی جہاز میں ان انتہائی خطرناک ہتھیاروں کی محفوض منتقلی کیسے ممکن بنائی جائے گی۔

اٹلی کی وزارت خارجہ کے حکام کا کہنا ہے کہ کیمیائی ہتھیار کسی بھی مرحلے اور مقام پر اٹلی کی سرزمین کو نہیں چھوئِیں گے، ان ہتھیاروں کی تلفی میں اٹلی کا کردار صرف بندرگاہ استعمال کرنے کی سہولت دینے تک ہے۔ وزارت خارجہ کے حکام نے فی الحال یہ نہیں بتایا ہے کہ اٹلی اس مقصد کیلیے اپنی کونسی بندرگاہ کی اجازت دے گا۔

واضح رہے شام میں تین سال سے جاری خانہ جنگی میں سوا لاکھ سے زائد شہری مارے جا چکے ہیں ۔ جبکہ کم از کم پانچ جگہں پر کیمیائی ہتھیار استعمال کیے جا چکے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں