.

دوسری مرتبہ صدر بیٹیوں کی حفاظت کے پیش نظر بنا: اوباما

امریکی صدر بیٹیوں کے سن بلوغت میں قدم رکھنے پر پریشان نہیں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکی صدر براک اوباما اپنی دونوں بیٹیوں کا خصوصی خیال رکھتے ہیں۔ اپنے ہر انٹرویو میں وہ کسی نہ کسی طور پندرہ سالہ مالیا اور بارہ سالہ ساشا کا ذکر ضرور کرتے ہیں۔

ایک حالیہ انٹرویو میں براک اوباما سے ایک بیان منسوب کیا گیا ہے کہ "انہوں نے دوسری مرتبہ صدارتی انتخاب لڑنے کا فیصلہ اس لئے کیا کہ انہیں اپنی بیٹیوں کے لئے صدارتی گارڈز کا تحفظ میسر رہے۔"

اگرچہ امریکی صدر کا یہ بیان تفنن طبع کے مظہر کے طور پر پیش کیا جا رہا ہے تاہم ان کے ناقدین کا کہنا ہے کہ براک اوباما نے بین السطور امریکی معاشرے میں سن بلوغت میں داخل ہونے والی بچیوں کے حوالے سے درپیش مسائل کا کھلے عام اعتراف کیا ہے۔

معروف امریکی کامیڈین اور براڈکاسٹر سٹیو ہاروے کو دیئے گئے انٹرویو میں صدر اوباما کا کہنا تھا کہ "ان کی دونوں بیٹیاں انتہائی حساس ہیں۔ مجھے صدر کے طور پر جو گاردز حکومت کی طرف سے ملے ہیں، وہ ہر لمحہ ان کا تحفظ کرتے ہیں۔"

وائٹ ہاوس میں ریکارڈ ہونے والے اپنے اس انٹرویو میں براک اوباما نے کہا کہ "میں نے دوسری مرتبہ صدارتی انتخاب لڑنے کا فیصلہ بھی اسی لئے کیا کہ میری بیٹیوں کو سیکنڈری سکول کے مرحلے تک کسی مشکل کا سامنا نہ کرنا پڑے۔"

"مالیا اور ساشا اچھی جا رہی ہیں ۔۔۔ وہ بہت تیزی سے سن بلوغت کی جانب بڑھ رہی ہیں۔" انہوں نے مزید کہا کہ "مجھے اس بات کی پریشانی ضرور ہے کہ میری بچیاں نارمل زندگی نہیں گذار پا رہی ہیں، تاہم ہم نے انہیں دوسروں سے تعلقات کے بارے میں اپنے مشکل فیصلے کرنے کی تربیت دی ہے۔"

خیال رہے کہ امریکی صدر اپنے خاندان کے ہمراہ گذشتہ روز دو ہفتے کی تعطیلات گذارنے ریاست ہوائی روانہ ہو گئے تھے۔ براک اوباما کے صدارتی منصب کے دوران دونوں صاحبزادیوں کو حتی الامکان عوام کی نظروں سے اوجھل رکھنے کی کوشش کی گئی۔