امریکیوں کا تحفظ جنوبی سوڈان کی ذمہ داری ہے: اوباما

بور شہر میں امریکی جہاز پر ہلکے ہتھیاروں سے فائرنگ کا واقعہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

امریکی صدر براک اوباما نے کا کہنا ہے کہ جنوبی سوڈان کے رہنماؤں کی ذمہ داری ہے کہ وہ جوبا اور بور میں امریکی فوجیوں اور شہریوں کے تحفظ کی امریکی کوششوں کا ساتھ دیں۔ انہوں نے خبردار کیا ہے کہ طاقت کے ذریعے اقتدار پر قبضے کی کوشش نہ کی جائے۔ یہ بیان جنوبی سوڈان میں چار امریکی فوجیوں کے زخمی ہونے کے بعد سامنے آیا۔

گذشتہ روز امریکی فوجی جہازوں پر حملے کے ایک واقعے میں چار امریکی فوجی زخمی ہو گئے تھے۔ یہ جہاز جنوبی سوڈان میں موجود امریکی شہریوں کو اس بحران زدہ ملک سے نکالنے میں مصروف تھے۔

امریکی صدر براک اوباما نے اپنے بیان میں کہا کہ عسکری طاقت کا استعمال کر کے اقتدار پر قبضے کی کوئی بھی کوشش امریکی اور عالمی برادری کی جانب سے تعاون کے خاتمے پر منتج ہو گی۔

وائٹ ہاؤس کی جانب سے صدر اوباما کے جاری کردہ بیان میں کہا گیا ہے کہ جنوبی سوڈان کے رہنماؤں کی ذمہ داری ہے کہ وہ جوبا اور بور میں امریکی فوجیوں اور شہریوں کے تحفظ کی امریکی کوششوں کا ساتھ دیں۔ خیال رہے کہ دارالحکومت جوبا اور باغیوں کے زیرقبضہ بور میں حکومتی فورسز اور باغیوں کے درمیان شدید جھڑپیں جاری ہیں۔

صدر اوباما کی جانب سے یہ بیان ہفتے کے روز جنوبی سوڈان میں امریکی شہریوں کو جنگ زدہ علاقے سے نکالنے کی سرگرمیوں میں مصروف تین جہازوں پر حملے کے واقعے کے بعد سامنے آیا ہے۔ واضح رہے کہ یہ جہاز ہیلی کاپٹر کی طرح عمودی پرواز کرنے کی اہلیت کے حامل ہیں اور انہیں جنوبی سوڈان میں موجود امریکی شہریوں کو نکالنے کے لیے استعمال کیا جا رہا ہے۔ اس حملے میں تینوں جہازوں کو نقصان پہنچا اور زخمیوں کو کینیا کے دارالحکومت نیروبی کے ایک ہسپتال منتقل کیا گیا۔ امریکی دفتر خارجہ کے مطابق زخمیوں کی حالت بہتر ہے۔

خیال رہے کہ امریکا، برطانیہ، کینیا اور یوگنڈا جنوبی سوڈان میں موجود اپنے شہریوں کو نکالنے کی سرگرمیوں میں مصروف ہیں۔

گزشتہ اتوار سے جنوبی سوڈان میں صدر سلوا کیر اور سابق نائب صدر رک ماچر کے حامی فوجیوں کے درمیان جھڑپیں جاری ہیں۔ خبر رساں اداروں کے مطابق اب تک ان جھڑپوں میں پانچ سو سے زائد افراد ہلاک ہو چکے ہیں، جب کہ عالمی برادری کی جانب سے جنوبی سوڈان کے رہنماؤں سے اپیل کی جا رہی ہے کہ اس بدامنی کو بڑے نسلی فسادات میں بدلنے سے روک لیا جائے۔

جمعرات 19 دسمبر کو جنوبی سوڈان کے صوبہ جونگلئی کے علاقے اکوبو میں میں قائم اقوام متحدہ کے ایک مرکز پر حملے میں امن مشن میں شریک تین بھارتی فوجی ہلاک ہو گئے تھے۔ اس مرکز میں حملہ آور گروپ کے مخالف نسلی گروپ کے تقریباً 30 افراد نے پناہ لے رکھی تھی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں