.

ترک صدرعبداللہ گل کا قانون کی حکمرانی کے احترام پر زور

''ایسے کردار سے گریز کرنا ہوگا جس سے آزاد اور غیر جانبدارعدلیہ پر حرف آسکتا ہو''

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

ترک صدر عبداللہ گل نے ملکی سیاست میں بھونچال برپا کردینے والے رشوت اور بدعنوانی کے اسکینڈل کے تناظر میں قانون کی حکمرانی کے احترام کی ضرورت پر زوردیا ہے۔

صدر عبداللہ گل نے نئے سال کے آغاز کے موقع پر اپنے بیان میں کہا ہے کہ ہمارے ملک اور دنیا کے لیے 2014ء ایک مشکل سال ہوگا۔

انھوں نے خبردار کیا کہ ''جمہوریت رولز اور اختیارات کی علاحدگی پر مبنی اداروں کے رجیم کا نام ہے۔یہ ہماری مشترکہ ذمے داری ہے کہ ہم ایسے کردار سے گریز کریں جس سے ایک آزاد اور غیر جانبدار عدلیہ کی تفہیم اور ادراک پر حرف آسکتاہو''۔

انھوں نے یہ بیان ایسے وقت میں جاری کیا ہے جب ان کی جماعت انصاف اور ترقی پارٹی (اے کے) سے تعلق رکھنے والے وزیراعظم رجب طیب ایردوان کے قریبی رفقاء اور وزراء کے بیٹوں کے خلاف ترک پراسیکیوٹرز رشوت اور بدعنوانی کے سنگین الزامات کی تحقیقات کررہے ہیں۔

رشوت اور بدعنوانی کے اس بڑے اسکینڈل نے ترکی کی حکمراں اشرافیہ کو اپنے لپیٹ میں لے لیا ہے۔اس کے منظرعام پر آنے کے بعد سے وزیراعظم رجب طیب ایردوآن کی حکومت کے خلاف احتجاجی مظاہروں کا سلسلہ جاری ہے اور ان سے مستعفی ہونے اور قبل از وقت انتخابات کرانے کا مطالبہ کیا جارہا ہے۔اس اسکینڈل کے بعد ان کی کابینہ کے تین وزراء اور متعدد ارکان پارلیمان مستعفی ہوچکے ہیں۔