.

فوجی راز تہران کو فراہم کرنے پر ایرانی نژاد امریکی کی گرفتاری

مظفر خزاعی پر لڑاکا طیاروں سے متعلق معلومات جمع کرنے کا الزام

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکی حکام نے بتایا ہے کہ پولیس نے ایرانی نژاد ایک امریکی کو فوج کے اہم اور حساس راز ایران کو فراہم کرنے کےالزام میں حراست میں لیا ہے۔ حراست میں لیے گئے شخص مظفر خزاعی پر امریکی جنگی جہازوں کےانجنوں کی تفصیلات تہران کو فراہم کرنے کا الزام عائد کیا گیا ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق امریکی وفاقی پراسیکیوٹر جنرل کی جانب سے جاری ایک بیان میں بتایا گیا ہے کہ 59 سالہ ایرانی نژاد امریکی مظفر خزاعی کو نو جنوری جمعرات کے روز ریاست نیو جرسی کے"لیبرٹی" ہوائی اڈے سے اس وقت حراست میں لیا گیا جب وہ جرمنی کے شہر فرانکفرٹ جانے والی ایک پرواز میں سوار ہو رہا تھا۔

بیان میں کہا گیا ہے کہ ملزم کے بارے میں خفیہ اداروں کو اطلاعات ملی تھیں کہ وہ امریکی فوج کے زیر استعمال جدید ترین "ایف 35" لڑاکا طیاروں کے انجنوں میں استعمال ہونے والے اسپیئر پارٹس کے بارے میں اہم معلومات ایران کو بتا رہا ہے۔ حراست میں لیے گئے ملزم کا کوئی ردعمل سامنے نہیں آیا ہے تاہم پینٹاگان کو کہنا ہے کہ مظفر خزاعی ماضی میں جنگی جہازوں کے انجن تیار کرنے والی ایک فرم کے ساتھ کام بھی کرتا رہا ہے۔ تاہم حکومت کی جانب سے اس کمپنی کا نام ظاہر نہیں کیا گیا ہے۔

البتہ امریکی اخبار "نیویارک ٹائمز" نے اپنی ایک رپورٹ میں لکھا ہے کہ مظفر خزاعی ماضی میں ہوائی جہازوں کے انجن تیار کرنے والی کمپنی"برائیٹ ویٹنی" سے وابستہ رہا ہے۔ ملزم کی مشکوک سرگرمیوں کے بارے میں وفاقی تحقیقاتی ادارے"سی آئی اے" کے ساتھ کمپنی کے عہدیداران بھی بھرپور تعاون کر رہے ہیں۔ امریکی پراسیکیوشن حکام کا کہنا ہے کہ الزام ثابت ہونے کی صورت میں ملزم کو کم سے کم 10 سال قید اور دو لاکھ 50 ہزار ڈالر جرمانہ ہو سکتا ہے۔