.

یمن سے رہا کردہ اشتہاری ملزمان کے نام ای سی ایل میں شامل تھے

العربیہ نے 29 اشتہاریوں کی سعودی حکام کوحوالگی کی تفصیلات جاری کر دیں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمن اور دوسرے ملکوں کی جانب سے سعودی حکام کو حوالے کیے گئے انتیس اشتہاریوں کی تفصیلات سامنے آئی ہیں۔ العربیہ ڈاٹ نیٹ کو اپنے ذرائع سے ان افراد کے بارت میں معلومات ملی ہیں جو یمن اور دوسرے ممالک کی جانب سے پچھلے کچھ عرصے کے دوران ریاض حکام کے حوالے کیے گئے۔

ذرائع کے مطابق ستائیس اشتہاری یمنی حکام نے حراست میں لے کر سعودی سیکیورٹی حکام کے حوالے کیے ہیں۔ ان لوگوں کے بیرون ملک سفر پر پابندی عائد تھی لیکن یہ غیر قانونی طریقے سے یمن چلے گئے تھے۔ ان میں سے ایک ملزم کسی تیسرے ملک کے راستے یمن میں داخل ہوا تھا۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ یمن کی جانب سے حوالے گئے اشتہاریوں میں سے ایک کو رواں ھجری سال میں رہا کیا گیا ہے جبکہ 12 افراد پچھلے سال رہا کر دیے گئے تھے اور سات افراد 1433ھ کو رہا کیے گئے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ حکام کو مطلوب دو افراد یمن کے علاوہ دوسرے ملکوں کی جانب سے سعودی عرب کے حوالے کیے گئے تھے۔

ذرائع نے اطلاع دی ہے کہ تین افراد کے اہل خانہ کی جانب سے حکام کو بتایا گیا تھا کہ پابندی کے باوجود ان کے کچھ عزیز ملک چھوڑ گئے ہیں۔

سعودی وزارت داخلہ کے ایک بیان میں بتایا گیا ہے کہ یمنی حکام نے 29 مطلوب سعودی شہری ریاض کے حوالے کیے تھے۔ ان پر مقدمات بھی چلائے گئے جنہیں بعد ازاں رہا کردیا گیا تھا۔ ان میں سے گیارہ افراد کو تھوڑے ہی عرصے میں کیا گیا البتہ نو ملزمان پر مقدمات چلائے گئے۔ عدالتوں کے حکم پر انہیں رہا کر دیا گیا۔