.

دہلی میں کجریوال حکومت کے استعفے کے بعد صدرراج نافذ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

بھارتی صدر پرنب مکھر جی نے وزیراعلیٰ دہلی اروند کجری وال کی حکومت کا استعفیٰ منظور کر لیا ہے اور لیفٹننٹ گورنرکی سفارش پر دارالحکومت میں صدر راج نافذ کردیا ہے۔

بھارتی وزیرداخلہ سوشیل کمار شنڈے نے سوموار کو پارلیمان کے ایوان زیریں لوک سبھا میں عبوری بجٹ تقریر سے قبل دہلی میں صدرراج کے نفاذ کے بارے میں بتایا ہے۔دہلی کے وزیراعلیٰ اروندکجری وال چودہ فروری کو بدعنوانیوں کی بیخ کنی کے لیے مجوزہ جن لوک پال بل اسمبلی میں پیش کرنے میں ناکامی کے بعد اپنے عہدے سے مستعفی ہوگئے تھے۔

بدعنوانیوں کے خلاف مہم سے شہرت پانے والے اروند کجری وال 28 دسمبر 2013ء کو کانگریس کی حمایت سے وزیراعلیٰ بنے تھے۔انھوں نے گذشتہ جمعہ کو ریاستی اسمبلی میں بالائی سطح پربدعنوانیوں کے خاتمے کے لیے لوک پال بل متعارف کرانے کی کوشش کی تو کانگریس اور حزب اختلاف بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کے ارکان نے ان کی مخالفت کی۔

اسمبلی میں اس ہزیمت کے بعد کجری وال نے تقریر کرتے ہوئے اپنے عہدے سے مستعفی ہونے کا اعلان کردیا۔انھوں نے دہلی کے لیفٹیننٹ گورنر نجیب جنگ سے اسمبلی کو تحلیل کرنے اور نئے انتخابات کے انعقاد کے لیے کہا تھا لیکن گورنر نے ان کی تجویز کے بجائے صدر راج کے نفاذ کی سفارش کی تھی۔