.

عراقی وزیر اعظم ظالم اور کرپٹ حکومت کے سربراہ ہیں، مقتدی الصدر

مقتدی کی طرف سے اپنے حامیوں کو انتخابات کی تیاری کی ہدایت

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

عراق کے طاقتور مذہبی رہنما مقتدی الصدر نے وزیر اعظم نورالمالکی کو ظالم قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ نورالمالکی ایک بدعنوان حکومت کے ایسے قاید ہیں جو اپنے مخالفین کو کچل رہے ہیں۔

مقتدی الصدر نے اس امر کا اظہار اپنے سیاست سے الگ ہونے کے اعلان کے محض چند دن بعد ایک ٹی وی خطاب کے دوران کیا ہے۔

مذہبی رہنما نے اپنے خطاب کے دوران نورالمالکی کو ظالم، آمر اور جابر شخس قرار دیتے ہوئے کہا '' ان کی حکومت میں شامل افراد اپنی ذمہ داریوں کے بدلے سیاسی اور مالی فوائد سمیٹ رہے ہیں۔ جبکہ اپنے مخالفین کو مالکی حکومت قتل کر رہی ہے، ملک بدر کر رہی ہے اور انہیں گرفتار کر رہی ہے۔ ''

مقتدی الصدر نے وزیر اعظم نورالمالکی پر یہ بھی الزام عاید کیا کہ کہ '' وہ اپنے سایسی مخالفین کو دہشت گرد قرار دے دیتے ہیں خواہ ان کا تعلق سنی فرقہ سے، شیعہ ہوں یا کرد ہوں۔ اس صورتحال میں مقتدی الصدر نے اپنے حامیوں کو ہدایت کی کہ وہ عراق میں ماہ اپریل میں متوقع اتخابات کی تیاری کریں۔''

پچھلے ہی ہفتے سیاست سے علیحدگی کا اعلان کرنے والے مقتدی الصدر عراق پر امریکی حملے کے سخت مخالف رہے ہیں۔ ان کی زیر قیادت سرگرم رہنے والی مہدی ملیشیا نے 2003 میں زبردست شہرت پائی تھی۔

وہ آج کل نورالمالکی کے سخت ناقد ہیں۔ مقتدی الصدر ان رہنماوّں میں شامل ہیں جنہوں نے 2012 نورالمالکی کے استعفے کا مطالبہ کیا تھا۔