.

الجزائری فوج کی کارروائی میں تین اسلامی جنگجو ہلاک

قبائلی علاقے میں فوجی آپریشن کے دوران بھاری مقدار میں اسلحہ وگولہ بارود برآمد

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

الجزائری فوج نے ملک کے مشرق میں واقع قبائلی علاقے میں ایک کارروائی کے دوران تین اسلامی جنگجوؤں کو ہلاک کردیا ہے۔

قبائلی کے پہاڑی علاقے میں الجزائری فوج گذشتہ منگل سے اسلامی مغرب میں القاعدہ سے وابستہ مسلح گروپوں کے خلاف کارروائی کررہی ہے اور اب تک پانچ اسلامی جنگجو مارے گئے ہیں۔

الجزائر کی وزارت دفاع نے ایک بیان میں کہا ہے کہ فوج نے سیدی علی بوناب میں کارروائی کے دوران بھاری مقدار میں اسلحہ اور گولہ بارود قبضے میں لے لیا ہے اور جنگجوؤں کے متعدد ٹھکانے تباہ کردیے ہیں۔

الجزائر کے مشرق میں پہاڑوں اور جنگلات پر مشتمل قبائلی علاقہ اسلامی جنگجوؤں کی آماج گاہ ہے اور انھوں نے 1990ء کے عشرے سے وہاں محفوظ ٹھکانے بنا رکھے ہیں۔الجزائر میں نوے کے عشرے کے دوران خانہ جنگی جاری رہی تھی مگر فوج کی کارروائیوں کے نتیجے میں حالیہ برسوں میں تشدد کے واقعات میں نمایاں کمی واقع ہوئی ہے۔البتہ اسلامی مغرب میں القاعدہ سے وابستہ جنگجوؤں نے مشرق میں قبائلی علاقے ،دارالحکومت اور جنوبی علاقے میں اپنے حملے جاری رکھے ہوئے ہیں۔