.

اسرائیلی طیاروں کی بمباری، غزہ میں دو فلسطینی جاںبحق

یہ افراد راکٹ حملوں کی تیاری کر رہے تھے، اسرائیلی حکام

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

اسرائیلی فوجی اور طبی ذرائع نے تصدیق کر دی ہے کہ پیر کے روز اس کی بمباری سے دو فلسطینی شہید ہو گئے تھے۔ اسرائیلی فوجی ذرائع کا دعوی ہے کہ جاں بحق ہونے والے دو فلسطینی اسرائیل پر راکٹ داغنے کی تیاری کر رہے تھے کہ اسرائیلی طیاروں نے انہیں نشانہ بنا لیا۔

فلسطینی ذرائع کے مطابق جاں بحق ہونے والا ایک 24 سال پرانا عسکریت پسند ہے۔ تاہم اسرائیلی طبی حکام دوسرے جاں بحق ہونے والے فلسطینی کے بارے میں کچھ نہیں بتایا ہے۔ خیال رہے کہ دوسرا جاں بحق ہونے والا بھی ایک عسکریت پسند تھا جو بمباری سے زخمی ہو گیا تھا۔

اسرائیل نے غزہ پر بمباری مبینہ طور پر جنوبی اسرائیل کو راکٹوں سے نشانہ بناے کی کارروائیاں روکنے کیلیے تھی۔ اسرائیل کے فوجی ترجمان کا دعوی ہے کہ ان راکٹ حملوں کا نشانہ سویلینز کو بنایا جاتا ہے۔

واضح رہے غزہ پٹی پر اسرائیل کے خلاف مزاحمت کرنے والی جماعت حماس کی حکومت ہے اور اسرائیل نے غزہ کی طویل عرصے سے ناکہ بندی کر رکھی ہے۔ اسرائیلی بمبار طیارے گاہے گاہے غزہ پر بمباری بھی کرتے رہتے ہیں۔