.

لاس اینجلس کے جرائم پیشہ بشار رجیم کی مدد گار

فوٹیج میں جرائم پیشہ گروپ کے دوارکان کو محاذ جنگ پر دکھایا گیا ہے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

لاس اینجلس کے جرائم پیشہ گروہ کے دو ارکان شام کی خانہ جنگی کا حصہ بن گئے ہیں۔ واشنگٹن پوسٹ کے مطابق یہ جرائم پیشہ عناصر بشارالاسد کی طرف سے لڑائی میں شامل ہوئے ہیں۔

ان دونوں افراد کے حوالے سے ایک ویڈیو سامنے آئی ہے جس میں انہیں لڑائی کرتے ہوئے دکھایا گیا ہے، جن کے خلاف وہ لڑائی میں مشغول ہیں انہیں دشمن قرار دیتے ہیں۔

ان میں سے ایک شخص نے خود کو ''کریپر'' کے نام سے متعارف کرایا ہے۔ اس کے بارے میں شبہ ہے کہ یہ اس کا تعلق جنوبی کیلیفورنیا کے میکسیکن مافیا گروپ کے ساتھ ہے۔

دوسرے نے اپنے آپ کو ''وینو'' کا نام دیا ہے۔ اس کا تعلق آرمینین پاور گینگ سے تعلق بتایا گیا ہے۔ دوسرا شخص سگریٹ نوشی کرتے فوجی لباس ہوئے دکھایا گیا ہے۔ دونوں کو بات چیت کرتے ہوئے بھی دکھایا گیا ہے۔

دونوں کو اپنے دشمنوں یعنی شامی باغیوں پر فائرنگ شروع کرتے دکھایا گیا ہے جس کے بعد ایک یہ کہہ رہا ہے کہ میں ایک گینگ کا حصہ ہوں۔ اس شخص کے اہداف بیان کیے بغیر بڑے فخریہ انداز میں بتایا گیا ہے کہ وہ لڑائی کے محاذ پر خط اول پر ہیں۔

واشنگٹن میں قائم مشرق وسطی کی خبروں کو مانیٹر کرنے والے ادارے نے بھی وینو کی شناخت کی ہے اور نرسس کلجیان کے نام سے متعارف کرایا ہے۔ واضح رہے مانیٹرنگ کا یہ ادارہ اسرائیل کے حمایت کے حوالے سے مشہور ہے۔ فیس بک پر بھی فوجی یونیفارم پہنے حزب اللہ کے شاہانہ انداز میں دکھایا گیا ہے۔