.

یوکرین کی صورتحال، روس کا بلیسٹک میزائلوں کا تجربہ

آئی سی بی ایم میزائلوں کا تجربہ یوکرین سے 450 کلو میٹر دور کیا گیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

روس نے بلیسٹک میزائل کا کامیاب تجربہ کیا ہے۔ یہ تجربہ مغربی دنیا کے ساتھ یوکرین کے معاملے پر پیدا ہونے والی کشید گی کے ماحول میں کیا گیا ہے۔ مغربی ممالک یوکرین میں روسی افواج کی تعیناتی پر نالاں ہیں۔

وزارت دفاع کے ترجمان کے مطابق اس سلسلے میں روس کی سٹریٹجک راکٹ فورسز نے آر ایس 12 ایم ٹوپل میزائل جنوبی علاقے میں تجرباتی ضرورت کیلیے فائر کیا ۔ میزائل نے اپنے آزمائشی ہدف کو قازقستان میں نشانہ بنایا۔

بیس میٹر لمبا آر ایس 12 ایم میزائل نیٹو ممالک میں ایس ایس 25 سکل کے نام سے جانا جاتا ہے۔ یہ میزائل روس میں سوویت یونین کی شکست و ریخت سے چھ سال قبل 1985 میں سوویت فورسز کو فراہم کیا گیا تھا۔ اب اس کا تجربہ یوکرائن سے 450 کلومیٹر مشرق میں کیا گیا ہے۔

واضح رہے امریکا اور روس کے درمیان 2010 میں ایک معاہدے پر دستخط کیے گئے تھے تاکہ آئی سی بی ایم کے سلسلے کی نئی سیریز پر پابندی لگانے پر اتفاق ہو سکے۔

روس نے ان جدید ترین میزائلوں کا ٹیسٹ ایسے وقت میں کیا ہے جب روسی نگران طیاروں نے ترکی کے نزدیک بحر اسود کے ساحلوں کے نزدیک پروازیں کی ہیں۔

دوسری جانب ترکی کے ایف سولہ طیاروں نے بھی جوابی پروازیں کی ہیں۔ دریں اثناء ترک میڈیا کے مطابق روسی جنگی بیڑوں نے ترکی کے باسفورس سمندر کو عبور کیا تا کہ بحر اسود میں پہنچ سکیں۔ ایک یوکرائنی کشتی کو بھی اسی سمندر کو عبور کرتے دیکھا گیا ہے۔ اس کشتی کی امکانی منزل بھی بحر اسود تھا