.

یورپی یونین:یوکرین کے لیے11 ارب یورو کے پیکج کا اعلان

یورپی مالیاتی اداروں کی جانب سے آیندہ چند سال کے دوران خطیررقوم دی جائیں گے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یورپی کمیشن کے صدر ہاؤزے مینول براسونے یوکرین کے لیے گیارہ ارب یورو کے ایک خطیرامدادی پیکج کا اعلان کیا ہے لیکن بحران زدہ ملک کو یہ رقوم آیندہ چند سال کے دوران دی جائیں گی۔

براسو نے بدھ کو برسلز میں نیوزکانفرنس میں کہا ہے کہ ''یہ پیکج اصلاحات پسند قومی حکومت کی امداد کے لیے وضع کیا گیا ہے۔اس کے تحت یورپی یونین کے بجٹ میں سے اور یورپی بین الاقوامی مالیاتی اداروں کی جانب سے گیارہ ارب یورو دیے جائیں گے''۔

ہاؤزے براسو جمعرات کو برسلز میں یوکرین کے عبوری وزیراعظم آرسینی یاتسینیوک سے ملاقات کریں گے اور ان سے اس پیکج کے بارے میں تبادلہ خیال کریں گے۔یوکرینی وزیراعظم یورپی یونین کے ہنگامی سربراہ اجلاس میں شرکت کریں گے۔اس میں کریمیا میں جاری فوجی بحران کے حوالے سے مشترکہ ردعمل کے بارے میں غور کیا جائے گا۔

یورپی کمیشن کے سربراہ نے کہا کہ بحران کا پُرامن حل تلاش کرنے میں مدد دینا یورپی یونین کی اولین ترجیح ہے۔اس کے تحت روس کی مسلح افواج کا وہاں سے انخلاء ہونا چاہیے۔انھوں نے ماسکو اور کیف کے درمیان کریمیا میں جاری بحران پر براہ راست بات چیت کا خیرمقدم کیا اور توقع ظاہر کی کہ طرفین کریمیا میں بین الاقوامی مبصرین کی تعیناتی پر متفق ہوجائیں گے۔

مسٹر براسو کا کہنا تھا کہ ''اس کے ساتھ ساتھ عالمی برادری کو یوکرین میں اقتصادی اور مالی صورت حال کے استحکام کے لیے اقدامات کرنے چاہئیں اور اسی کے نتیجے میں اس ملک میں سیاسی اور سماجی امن بھی رو بہ عمل ہوگا''۔

انھوں نے بتایا کہ یورپی یونین کی جانب سے یوکرین کے لیے اعلان کردہ امدادی پیکج مختصر اور درمیانی مدت کے اقدامات پر مبنی ہے۔اس کے تحت اس ملک کو تجارتی ،اقتصادی ،ٹیکنیکل اور مالیاتی امداد کی پیش کش کی جارہی ہے اور یوکرین میں مختلف منصوبوں میں سرمایہ کاری کی جائے گی۔