نیٹو طیاروں کا فوجی چوکی پر حملہ، 5 افغان فوجی ہلاک

حملہ امریکی ڈرون طیاروں کی مدد سے کیا گیا، ضلعی گورنر

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

نیٹو نے افغانستان کے مشرقی صوبہ لوگر میں جمعرات کی صبح فضائی حملہ کیا ہے۔ اس حملے کے نتیجے میں افغان نیشنل آرمی کے پانچ اہلکار ہلاک اور 17 زخمی ہوگئے ہیں۔ فوری طور پر اس حملے کی وجوہات سامنے نہیں آسکی ہیں۔ صوبائی گورنر کے ترجمان دین محمد درویش نے اس واقعے کی تصدیق کردی ہے۔

بعد ازاں افغانستان میں سرگرم نیٹو فورسز نے بھی اس کارروآئی کی تصدیق کر دی ہے۔ تاہم نیٹو ترجمان نے افغان فوجیوں کی ہلاکت کو ایک حادثہ قرار دیا ہے۔ مبصرین کا کہنا ہے کہ اس واقعے سے افغان حکومت اور نیٹو فورسز کے درمیان کشیدگی کی زد میں تعلقات پر مزید منفی اثر پڑے گا۔ واضح رہے امریکا اور افغان حکومت کے درمیان مجوزہ معاہدے پر اختلاف چل رہا ہے۔

ترجمان کے مطابق یہ فضائی حملہ علی الصبح ساڑھے تین بجے کیا گیا۔ ایک عالمی خبر رساں ادارے کے مطابق زخمی فوجیوں کی تعداد آٹھ ہے۔ ضلعی گورنر خلیل اللہ کمال نے موقع پر جا کر ملنے والے شواہد کی بنیاد پر کہا ہے کہ یہ کارروائی امریکی ڈرون طیاروں کی مدد سے کی گئی ہے۔

کارروائی کے نتیجے میں فوجی پوسٹ مکمل طور پر تباہ ہو گئی ہے۔ یہ پوسٹ ایک پہاڑی چوٹی پر قائم ہے اور اس سے پہلے امریکی فوجیوں کے پاس رہی ہے۔ آجکل اسے افغان فوج استعمال کر رہی تھی۔

مقبول خبریں اہم خبریں