.

اسرائیلی فوج کی فائرنگ سے فلسطینی شہید

فلسطینی پر اسرائیلی فوجی سے اسلحہ چھیننے کا الزام

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

اسرائیلی فوج نے ایک فلسطینی شہری کو گولی مار کر شہید کر دیا ہے۔ فلسطینی شہری کے بارے میں دعوی کیا گیا ہے کہ اس نے اسرائیلی فوجی سے مغربی کنارے اور اردن کی سرحد پر اسلحہ چھیننے کی کوشش کی تھی۔

عالمی خبر رساں ادارے کے مطابق اسرائیلی فوجیوں کی فائرنگ سے زخمی ہونے کے کچھ دیر بعد جاں بحق ہو گیا، اس بارے میں فوجی ترجمان نے کہا '' میں تصدیق کر سکتا ہوں کہ وہ مر چکا ہے۔''

ترجمان کے مطابق اس فلسطینی کو اس وقت گولی ماری گئی جب اس نے ایک فوجی سے اس کا اسلحہ چھیننے کی کوشش کی۔ اس کے جواب میں فوجیوں نے فائرنگ شروع کر دی۔''

شہید ہونے والے فلسطینی کی شناخت 38 سالہ رائد زیتتر کے طور پر ہوئی ہے۔ رائد کا تعلق مغربی کنارے کے شمالی حصے کے شہر نابلس سے بتایا گیا ہے۔ تاہم فلسطینی سکیورٹی حکام کے مطابق رائد نے مغربی کنارے سے اپنی سکونت 2011 میں کسی دوسری جگہ منتقل کر لی تھی اور تب سے واپس نہیں آیا تھا۔