لاپتہ طیارہ: چین اور امارات بھی ملائیشیا کی مدد کیلیے متحرک

دس روز سے لاپتہ طیارے کا کوئی سراغ نہیں ملا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

چین اور متحدہ عرب امارات نے بھی ملائیشیا کے لاپتہ مسافر طیارے کی تلاش کیلیے آپریشن شروع کر دیا ہے۔ دو سو انتالیس مسافروں کو لے کر بیجنگ جانے والا مسافر طیارے کا رابطہ دس روز پہلے اپنی پرواز کے اکتالیس منٹ بعد ائیر کنٹرول ٹریفک سے منقطع ہو گیا تھا۔

چین اور متحدہ امارات کے سرکاری خبر رساں اداروں نے اس بارے میں باضابطہ رپورٹ کیا ہے۔ رپورٹ کے مطابق متحدہ عرب امارات کی مسلح افواج طیارے کی تلاش کیلیے جاری کوششوں میں شامل ہوگئی ہیں۔ اس سلسلے میں متحدہ عرب امارات کے دو طیارے حصہ لے رہے ہیں۔

ملائیشیا کے لاپتہ طیارے کیلیے 25 ملکوں کی ٹیمیں سرگرم ہیں۔ ان ملکوں کی تلاش کیلیے کوششوں کا دائرہ کار بحر ہند کے جنوب میں آسٹریلیا تک اور وسطی ایشیا کے شمالی اور جنوبی علاقوں تک پھیلا ہوا ہے۔

واضح رہے چین 26 واں ملک ہے جو اس سرچ آپریشن میں شامل ہے۔ چینی خبر رساں ادارے کے مطابق چین اپنی ان کوششوں کو شمالی علاقوں میں جاری رکھے ہوائے ہے۔ تاہم ابھی تک لاپتہ مسافر طیارے پر سوار چینی مسافروں کے بارے میں کوئی سراغ ہاتھ نہیں آیا ہے۔

دس دنوں میں داخل ہونے والی کوششوں کے باوجود کچھ معلوم نہ ہو سکنے کی وجہ سے تلاش میں مصروف ماہرین اور تفتیش کار اس نتیجے پر پہنچ رہے ہیں، کہ کوئی فرد بوئینگ 200 -777 ای آر کی نیوی گیشن سے متعلق معاملات سے خوب آگاہ تھا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں