مالدیپ: لاپتہ طیارے کے حوالے سے ایک اور پراسرار گواہی

آٹھ مارچ کی صبح، طیارے کی انتہائی نیچی پرواز دیکھی گئی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

ملائیشیا کے لاپتہ ہونے والے مسافر طیارے کا معاملہ جہاں جدید سیٹلائٹ ٹیکنالوجی ، ریڈار سسٹم اور سمندروں کے پانیوں کو کھنگال اور کھوج ڈالنے کی ترقی کے دلفریب دعووں کے لیے ایک خوفناک چیلنج بنا ہوا ہے وہیں اس کی پراسراریت میں نت نئے اضافے کا ذریعہ بننے والی خبریں بھی سامنے آرہی ہیں۔

اس سلسلے کی تازہ خبر مالدیپ کے شہریوں کے دعوے کے حوالے سے سامنے آئی ہے۔ مالدیپ کے شہریوں کا دعوی ہے کہ انہوں نے ایک طیارے کو انتہائی نیچی پرواز کرتے ہوئے آٹھ مارچ کی صبح دیکھا تھا۔ ان عینی شاہدوں کے طور پر سامنے آنے والوں کے مطابق اس قدر نیچی پرواز کا منظر انہوں نے اس سے پہلے کبھی نہیں دیکھا تھا۔ حتی کہ جہاز کے دروازے تک پوری طرح ان کے سامنے اپنے خدوخال کے ساتھ نمایاں تھے۔ جہاز کے زمین کے قریب ہو جانے کی وجہ سے شور بھی بلاکا تھا۔

ان شاہدین کے مطابق یہ جمبوجیٹ صبح چھ بج کر پندرہ منٹ پر دیکھا گیا۔ اسے دیکھ کر مالدیپ کے کئی شہری گھروں سے باہر نکل آئے تاکہ اس عجوبہ پرواز دیکھ سکیں جسے دیکھنے کیلے آسمان کی طرف سر باور نطریں اٹھا کر دیکھنے کی ضرورت نہ تھی بلکہ طیارہ سامنے کی چیز کے طور پر انتہائی نیچی پرواز پر تھا۔ اس کا رخ شمال سے جنوب مشرق کی طرف تھا۔

شاہدین کا کہنا ہے کہ انہوں نے اس قدر زمین سے قریب پرواز اپنے جزیرے پر رہتے ہوئے کبھی نہیں دیکھی ہے۔ '' ہم نے سمندر پر تیرتے بحری جہاز دیکھے ہیں لیکن یہ ان میں سے نہ تھا۔'' واضح رہے لاپتہ ملائیشین طیارے کی تلاش کیلیے بین الاقوامی سطح پرجاری کوششیں جنوب مشرقی ایشیا اور بحر ہند پر جاری ہیں۔

کل دو سو انتالیس افراد کو کوالالمپور سے لے کر بیجنگ روانہ ہونے والے بوئنگ 777 طیارے کا ائیر ٹریفک کنٹرول سے رابطہ صرف 41 منٹ بعد منقطع ہو گیا تھا۔ تب سے اب تک اس کی تلاش میں سرگرداں ماہرین کوئی سراغ نہیں پا سکے ہیں۔ البتہ قیافوں اور اندازوں کے چھوٹے چھوٹے ٹکڑوں کو جوڑ جوڑ کر گمان کا ایک ہیولا تشکیل دیا جاتا ہے اور پھر قدرت کے سربستہ رازوں کو پالینے کی دعویدار دنیا کے ماہرین اس کے پیچھے دوڑ پڑتے ہیں۔

سیٹلائٹسس اور ریڈاروں کی مدد سے البتہ یہ کہا جا رہا ہے کہ کسی شخص نے اس طیارے کا رخ موڑ دیا تھا۔ اس سے آگے کیا ہوا اس کے بارے میں یقین سے کچھ نہیں کہا جا سکا۔ البتہ یہ بات پکی ہے کہ ابھی تک تلاش آگے نہیں بڑھ سکی ہے۔ اس موقع پر مالدیپ کے شہریوں کا یہ دعوی سامنے آجانا کہ انہوں نے ایک بوئنگ طیارہ انتہائی نیچی پرواز کرتے ہوئے اپنے جزیرے سے دیکھا تھا بہر حال ایک نئی سمت ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں