.

ہفتہ وار تعطیل پر بیت اللہ کے گرد معتمرین کا غیر معمولی ھجوم

حکومت بیرون ملک سے آئے مہمانوں کو موقع دینے کے لیے کوشاں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

خانہ کعبہ شریف کے جاری توسیعی منصوبوں پر کام میں تیزی کے ساتھ بیرون اور اندرون ملک سے معتمرین کی تعداد میں بھی غیرمعمولی اضافہ دیکھنے میں آیا ہے۔ العربیہ ڈاٹ نیٹ نے تصاویر کی مدد سے بتایا ہے کہ جمعرات کے روز فرزندان اسلام کی بڑی تعداد خانہ کعبہ کا طواف کرتے دیکھی جا رہی ہے۔ دوسری جانب سعودی وزارت حج نے توقع ظاہرکی ہے کہ بیرون ملک سے معتمرین کی تعداد چار لاکھ سے تجاوز کرسکتی ہے جبکہ اندرون ملک سے معتمرین کی تعداد کے بارے میں حتمی اعدادو شمار جاری نہیں کیے جا سکتے ہیں۔

سیکرٹری حج وعمرہ عیسٰی رواس نے"العربیہ ڈاٹ نیٹ" سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ خانہ کعبہ کے توسیعی منصوبوں پر کام تیزی سے جاری ہے۔ اس دوران مناسب یہی ہے کہ مملکت کے باشندے اور یہاں پر مقیم غیرملکی مسلمان بیرون ملک سے آنے والے اللہ کے مہمانوں کو طواف کعبہ کا موقع فراہم کریں۔

ڈائریکٹر برائے حرم مکی میجر جنرل یحیٰ الزھرانی نے بھی مقامی شہریوں سے اپیل کی ہے کہ وہ خانہ کعبہ کی تعمیرات کے پیش نظر دوسرے ممالک سے آنے والے زائرین اور معتمرین کو موقع فراہم کریں کیونکہ بیرون ملک سے بڑی تعداد میں لوگ عمرہ کرنے سعودی عرب پہنچ رہے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ حرم مکی شریف کے دو تہائی حصے کی توسیع کا عمل جاری ہے، جس کے باعث ایک ہی وقت میں زیادہ افراد کے عمرہ کرنے کی سہولت نہیں ہے۔ اس کے باوجود زائرین کعبہ کا ھجوم لگا رہتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ تعمیراتی کام اگلے ڈیڑھ سال تک جاری رہے گا۔ اس دوران مقامی شہریوں کو بیرون ملک سے آنے والے مہمانوں کا خاص خیال رکھنا ہو گا۔

دوسری جانب سیکرٹری حج وعمرہ امور عیسیٰ رواس نے کہا کہ حکومت کی جانب سے عمرہ کرنے والے مقامی شہریوں کی رجسٹریشن یا ان کی تعداد متعین نہیں کی گئی۔ مقامی معتمرین کے بارے میں حکومت کے پاس کوئی حتمی ریکارڈ نہیں ہے۔ ان کا اس بات سے اشارہ تھا کہ مقامی شہریوں کو بھی عمرہ کی ادائی سے روکا نہیں جا رہا ہے۔ عیسیٰ رواس کاکہنا تھا کہ ہفتہ وار تعطیل کے دوران زائرین کعبہ کے ھجوم میں غیر معمولی اضافے کا امکان ہے۔