.

روسی ایجنٹ یوکرین میں افراتفری پھیلا رہے ہیں:جان کیری

یوکرین کے مشرقی شہروں میں کریمیا ایسی صورت پیدا کی جارہی ہے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکی وزیرخارجہ جان کیری نے روس پر یوکرین کے مشرقی شہروں میں انارکی پھیلانے کے لیے اپنے ایجنٹ بھیجنے کا الزام عاید کیا ہے۔ان کا کہنا ہے کہ روس یوکرین کے مشرقی شہروں میں کریمیا ایسی صورت حال پیدا کرنے کی کوشش کررہا ہے تا کہ وہاں بھی فوجی کارروائی کی جاسکے۔

جان کیری نے امریکی ارکان کانگریس کو بتایا ہے کہ''گذشتہ اڑتالیس گھنٹے کے دوران مشرقی یوکرین میں ہم نے روس کی جانب سے اشتعال انگیزی کو ملاحظہ کیا ہے۔اس کے ایجنٹ وہاں بروئے کار ہیں اور وہ افراتفری پھیلا رہے ہیں''۔

امریکی وزیرخارجہ نے روس کی ان کوششوں کو ''غیر قانونی اور بلاجواز'' قراردیا ہے اور کہا ہے کہ یہ بالکل ناقابل قبول ہیں۔انھوں نے کہا کہ روس علاحدگی کی سرگرمیوں کی حوصلہ افزائی کے ذریعے پڑوسی ملک یوکرین کو عدم استحکام سے دوچار کرنے کی کوشش کررہا ہے۔

وائٹ ہاؤس نے گذشتہ روز روسی صدر ولادی میر پوتین کو مشرقی یوکرین میں خفیہ یا علانیہ مداخلت پر خبردار کیا تھا اور کہا تھا کہ اسے اختتام ہفتہ پر کیے گئے اشتعال انگیز اقدامات پر تشویش لاحق ہے۔

وائٹ ہاؤس کے ترجمان جے کارنی نے واشنگٹن میں صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا:''ہم صدر ولادی میر پوتین اور ان کی حکومت سے مطالبہ کرتے ہیں کہ وہ یوکرین کو عدم استحکام سے دوچار کرنے کی کوششوں سے باز آجائیں اور فوجی مداخلت سے بھی باز رہیں''۔

ترجمان نے خبردار کیا کہ مشرقی یوکرین میں روسی فورسز کے کسی بھی اقدام کواشتعال انگیزی سمجھا جائے گا اور اس کے ردعمل میں مغرب کی جانب سے نئے مضمرات ہوں گے۔

درایں اثناء یوکرین کے عبوری صدر اولیکسندر ترچینوف نے کہا ہے کہ ملک کے مشرقی شہروں میں سرکاری عمارتوں پر قبضہ کرنے والے روسی علاحدگی پسندوں کے ساتھ دہشت گردوں ایسا معاملہ کیا جائے گا اور ان کے خلاف قانون کے مطابق سخت کارروائی کی جائے گی۔

یوکرینی وزیرداخلہ آرسن اواکوف نے اپنے فیس بُک صفحے پر ملک کے جنوب مشرقی علاقے میں دہشت گردی مخالف کارروائی شروع کرنے کی اطلاع دی ہے اور بتایا ہے کہ ایک سرکاری عمارت پر قبضے کے الزام میں ستر علاحدگی پسندوں کو گرفتار کر لیا گیا ہے۔

یوکرین کے مشرقی شہروں خارکیف ،لہانسک اور دانتسک میں روس نواز علاحدگی پسندوں نے اتوار کی رات سے بعض سرکاری عمارتوں پر قبضہ کر رکھا ہے اور وہ ان شہروں میں بھی جزیرہ نما کریمیا کی طرح ریفرینڈم کرانے کا مطالبہ کررہے ہیں۔روس نواز کارکنان نے دانتسک میں مرکزی انتظامی عمارت پر قبضہ کر لیا تھا اور اپنے تئیں دانتسک کو خودمختار جمہوریہ کے قیام اور اس کی علاقائی خودمختاری کے لیے 11 مئی کو ریفرینڈم کرانے کا اعلان کیا تھا۔