بھارت: تین اسرائیلی سفارت کاروں کے خلاف فوجداری مقدمہ

نئی دہلی کے بین الاقوامی ہوائی اڈے پر امیگریشن افسر کو تشدد کا نشانہ بنانے کا الزام

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

بھارت کے دارالحکومت نئی دہلی میں متعین اسرائیل کے تین سفارت کاروں کے خلاف اندرا گاندھی بین الاقوامی ہوائی اڈے پرایک امیگریشن افسر کو تشدد کا نشانہ بنانے کے الزام میں فوجداری مقدمہ درج کرلیا گیا ہے۔

امیگریشن افسر پر تشدد کا واقعہ ہفتے کی دوپہر 1:30 بجے کے قریب ایئر پورٹ کے ٹرمینل تین پر پیش آیا تھا اور یہ تینوں اسرائیلی سفارت کار نیپال کے دارالحکومت کٹھمنڈو کے لیے روانہ ہورہے تھے۔ پولیس کے مطابق ان تینوں نوجوان سفارت کاروں کو امیگریشن ضوابط کی تکمیل کے لیے انتظار کرنا پڑا تھا کیونکہ کاؤنٹر پر کافی رش تھا۔

بھارتی اخبارات کی رپورٹ کے مطابق تینوں اسرائیلی سفارت کار اپنے کاغذات کی جانچ پڑتال کے لیے سوم ویر نام کے امیگریشن افسر کے کاؤنٹر پر آئے تھے اور ان سے کہا کہ وہ انھیں جلد فارغ کردیں لیکن ایک اسرائیلی سفارت کار کے بہ قول سوم ویر سست روی سے کام کر رہے تھے۔ اس پر اُن دونوں کے درمیان بحث و تکرار ہوگئی اور اسرائیلی سفارت کار نے سوم ویر کے منہ پر طمانچہ رسید کردیا اور دیگر دو نے انھیں دھکے دیے۔

ایئر پورٹ حکام نے پولیس کو اس واقعہ کی اطلاع دی جو فوری طور پر وہاں پہنچ گئی۔ ان تینوں سے پوچھ گچھ کی گئی تو انھوں نے بتایا کہ وہ اسرائیلی سفارت کار ہیں اور سفارتی مشن پر کٹھمنڈو روانہ ہورہے ہیں۔یہ سارا واقعہ سی سی ٹی وی کیمرہ میں فلم بند ہوا ہے اور پولیس نے تحقیقات کے لیے اس فوٹیج کو محفوظ کرلیا ہے۔

تینوں اسرائیلی سفارت کاروں کے خلاف شکایت پر پولیس نے فوجداری مقدمہ درج کر لیا ہے اور نئی دہلی میں اسرائیلی سفارت خانہ کو اس واقعہ کی اطلاع دے دی گئی ہے۔ان کے خلاف تعزیرات ہند کی دفعہ 186 اور 332 کے تحت مقدمہ درج کیا گیا ہے۔یہ دونوں دفعات کارسرکار میں مداخلت اور سرکاری ملازم کو زبردستی اس کے فرائض کی انجام دہی سے روکنے سے متعلق ہیں۔

اس واقعہ سے متعلق مزید کارروائی کے بارے میں ایک سوال پر ڈپٹی کمشنر پولیس (آئی جی آئی ایئر پورٹ) ایم آئی حیدر نے کہا کہ قانون کے مطابق کارروائی کی جائے گی۔ یہ اپنی نوعیت کا پہلا واقعہ ہے جس کے بارے میں فی الحال کچھ کہنا قبل از وقت ہوگا اور وزارت امور خارجہ اس مسئلہ پر کوئی فیصلہ کرے گی۔

ان تینوں اسرائیلیوں کے بارے میں بتایا گیا ہے کہ وہ جونیئر سطح کے اہلکار ہیں۔ان سے ہوائی اڈے پر پولیس نے ابتدائی پوچھ گچھ تو کی ہے لیکن انھیں باضابطہ طور پر گرفتار نہیں کیا ہے کیونکہ انھیں سفارتی استثنیٰ حاصل ہے۔تاہم حکام کا کہنا ہے کہ وزارت خارجہ کی جانب سے کلئیرینس ملنے کے بعد ان تینوں سفارت کاروں کو دوبارہ پوچھ گچھ کے لیے طلب کیا جائے گا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں