.

لندن کی شاہراہ پر نامعلوم شخص کی' ڈاگ واک'

اردگرد کھڑے افراد انوکھا منظر دیکھ مبہوت رہ گئے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

لندن جیسے صاف ستھرے شہر کی سڑکوں پر کتوں یا دوسرے پالتو جانوروں کی موجودگی کا امکان کم ہی رہتا ہے مگر ایک شخص نے خود "کتا" بن کر اس کمی کو دور کرنے کی کوشش کی ہے۔ خبر یہ ہے برطانیہ کے دارالحکومت لندن کی شاہراؤں پر ایک شخص کو کتے کی طرح ایک خاتون کے پیچھے چلتے دیکھ کر راہ گیر حیرت زدہ رہ گئے۔

برطانوی اخبار "انڈیپنڈنٹ" کے مطابق یہ انوکھا منظر لندن کی ایک شاہراہ پر دیکھا گیا جب ایک شخص کو صاف ستھری پینٹ شرٹ پہنے کتا بنے دیکھا گیا تو راہ گیر مبہوت رہ گئے۔ ہاتھوں اور گھٹنوں کے بل چلنے والے اس شخص کے گلے میں ایک رسی باندھی گئی ہے جسے آگے ایک خاتون نے ہاتھ میں پکڑ رکھا ہے۔ خاتون نہایت پُرسکون اور گرد و پیش سے بے خبر اپنے من میں ڈوبی کافی کی چسکیاں لے رہی ہے۔ خاتون کی چال ڈھال سے ایسے لگ رہا ہے کہ گویا اس کے پیچھے کتے کی طرح چلنے والا انسان نہیں بلکہ کوئی پالتور جانور ہے جو اس کے اشاروں پر نہایت وفاداری سے ساتھ ساتھ چل رہا ہے۔

لندن کی ایک مصروف شاہراہ پر پیش آنے والے منظر کو کئی راہ گیروں نے اپنے موبائل کیمروں میں محفوظ کیا۔ ایک شخص نے موبائل کیمرے سے وہ تصاویر سماجی رابطے کی ویب سائٹ "ٹیوٹر" پر پوسٹ کر دیں جو اب سوشل میڈیا پر تیزی سے مقبول ہو رہی ہیں۔

رپورٹ کے مطابق فی الحال یہ معلوم نہیں ہو سکا کہ یہ 'واردات' کسی خاص پروپیگنڈہ مہم کا حصہ ہے یا اس کے ذریعے تعلقات عامہ کو سمجھانے کی کوشش کی گئی ہے۔ اخبار نے 'کتا' بننے والے شخص کا کھوج لگانے کا وعدہ کیا ہے اور کہا ہے کہ وہ اس واقعے کی حقیقت معلوم کریں گے کہ وہ شخص بھونکا بھی تھا یا ٹریفک کے ھجوم میں فرار ہو گیا۔