.

مصر میں مساجد کی کڑی نگرانی شروع

اقدام کا مقصد منبر و محراب سے تشدد کا پرچار روکنا ہے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

مصر کی حکومت نے ملک بھر کی مساجد کی کڑی نگرانی شروع کی ہے۔ اس اقدام کا مقصد کالعدم دینی سیاسی جماعت اخوان المسلمون کو مساجد کے ذریعے حکومت کے خلاف پرتشدد کارروائیوں اور پیش آئند صدارتی انتخابات کی راہ میں رکاوٹیں کھڑی کرنے سے روکنا ہے۔

العربیہ ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق مصری کابینہ کے اجلاس کے بعد جاری کردہ ایک بیان میں بتایا گیا ہے کہ حکومت نے مکمل چھان بین کے بعد جامعہ الازھر کے غیر جانبدار 17 ہزار مبغلین اور فضلاء کو جامع مساجد میں خطبہ جمعہ کی اجازت دی ہے تاکہ مساجد اور منبر و محراب کو تشدد پر اکسانے کے لیے استعمال روکا جا سکے۔

رپورٹ کے مطابق وزارت داخلہ نے پہلے ہی ملک بھر کی مساجد کی کڑی نگرانی شروع کر دی تھی۔ نئی مانیٹرنگ پالیسی کے تحت اس امر کو یقینی بنایا جا رہا ہے کہ مساجد، عبادت گاہوں اور منبر و محراب کو سیاسی اور گروہی مقاصد کے لیے استعمال روکا جا سکے۔

مصری محکمہ مذہبی امور اوقاف کے عہدیداروں کا کہنا ہے کہ جنوری 2011ء کے انقلاب کے بعد ملک کی اکثر مساجد بدنظمی کے لیے استعمال کی جاتی رہی ہیں،لیکن اب اس باب کو بند کرنا ہو گا۔

حکومتی عہدیداروں کا اہم ہدف اعتدال پسند مذہبی جماعت اخوان المسلمون اور ان کے حمایتی گروپوں کو مقدس مقامات اور مساجد سے دور رکھنا ہے تاکہ منبر و محراب کو سیاسی اور جماعتی مقاصد اور پروپیگنڈے کے لیے استعمال نہ کیا جا سکے۔

مصری محکمہ اوقاف نے حال ہی میں ایک لاکھ 30 ہزار مساجد کی رجسٹریشن مکمل کی تھی، ان میں سے 10 ہزار مساجد اب بھی محکمہ امور دینیہ کے کنٹرول سے باہر ہیں۔ وزارت مذہبی امور نے ان دیگر مساجد کو بھی اپنی تحویل میں لینے کا فیصلہ کیا ہے۔

جامعہ الازھر میں پولیٹیکل و اسٹریٹیجک اسٹڈیز ریسرچ سینٹر کے رکن یسری العزباوی کا کہنا ہے کہ پچیس جنوری 2011ء کے انقلاب کے بعد مساجد کو سماج اور ریاست کی تکفیر کے لیے استعمال کیا جاتا رہا ہے۔ خاص طور پر سابق صدر ڈاکٹر محمد مرسی کے دور میں مساجد کا سیاسی مقاصد کے لیے بے دریغ استعمال کیا گیا۔

خیال رہے کہ چند ماہ قبل مصری محکمہ اوقاف نے ملک بھر کی مساجد کے لیے جمعہ کا خطبہ مخصوص کرنے کا اعلان کیا تھا تاہم حکومت کو اس کے نفاذ میں مشکلات کا بھی سامنا کرنا پڑا تھا۔

درایں اثناء محکمہ اوقاف نے ملک کی تمام مساجد کے آئمہ اور خطباء کے لیے جمعہ کے خطبہ کے موضوعات کی فہرست تیار کرنا شروع کی ہے۔ حکومت کے وضع کردہ موضوعات میں قومی ہم آہنگی، اتحاد، اعتدال اور تشدد سے گریز جیسے موضوعات شامل ہیں۔