تین ہم جنس پرست امریکی خواتین شادی کے بعد اُمید سے!

برین، کیٹین اور ڈول غیر فطری شادی کے بندھن میں منسلک ہیں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

امریکی ریاست میسا چیوسٹیس میں گذشتہ برس اگست میں آپس میں شادی رچانے والی تین ہم جنس برست لڑکیوں نے "اُمید سے" ہونے کا دعویٰ کیا ہے۔ ڈول، کیٹین اور برین کو امید ہے کہ آئندہ مہینے وہ تینوں ماں بننے والی ہیں۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق ہم جنس پرستانہ شادی کے بعد تینوں امریکی خواتین نامعلوم مردوں کے "جرثومے" سے مائیکر سکوپک انجکشن کے ذریعے حاملہ ہوئی تھیں۔ سب سے پہلے 27 سالہ کیٹین نے نامعلوم شخص سے اس کا جرثومہ حاصل کیا، جس کے بعد 30 سالہ ڈول اور 34 سالہ برین بھی اسی طریقے سے حاملہ ہوئی ہیں۔ اگر یہ تجربہ کامیاب ہوا تو وہ حقیقی معنوں میں مائیں بنیں گی، بہ صورت دیگر وہ دوسری خواتین کے بچے گود لیں گی۔

تینوں ہم جنس پرست عورتوں کے اہل خانہ نے اگست دو ہزار تیرہ میں ڈول، کیٹین اور برین کی شادی کرائی اور اُنہیں عروسی ملبوسات پہنائے۔ ان تینوں نے ایک دوسرے کو تحائف دیے اور ہیروں کی انگشتریوں کا تبادلہ کیا تھا۔ شادی کی تقریب میں تینوں کے اہل خانہ اور دوستوں کی بڑی تعداد بھی موجود تھی۔

اس منفرد اور غیر فطری خاندان کے معمولات بھی دلچسپ ہیں۔ برین کے ذمہ خاندان کی معاشی ضروریات پوری کرنا ہے۔ وہ گھر سے باہر کام کاج کرتی ہے۔ ڈول کی ذمہ داری گھر میں کھانے پکانے کی ہے جبکہ گھر کی صفائی کیٹین کے ذمہ ہے۔ کام کاج کے لیے گھر سے باہر جانے سے قبل کیٹین برین کا میک بنانے اور اس کا 'ہیئر اسٹائل' ٹھیک کرنے میں بھی اس کی مدد کرتی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں