.

افغانستان: برطانوی فوجی ہیلی کاپٹر تباہ، 5 فوجی ہلاک

واقعے کی تحقیقات شروع کر دی گئی ہیں: برطانوی وزارت دفاع

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

افغانستان میں برطانیہ کا فوجی ہیلی کاپٹر تباہ ہونے سے پانچ فوجی ہلاک ہو گئے ہیں۔ برطانوی وزارت دفاع نے واقعے کی تحقیقات شروع کر دی گئے ہیں تاکہ معلوم کیا جا سکے کہ ہیلی کاپٹر کی تباہی کے عوامل کیا بنے۔

وزارت دفاع کے مطابق ہیلی کاپٹر پر سوار اہلکاروں کی شناخت ہونا ابھی باقی ہے۔

تاہم زیادہ گمان یہی ہے کہ یہ سارے برطانوی فوج کے ہی اہلکار تھے۔ ایک ہیلی کاپٹر کی تباہی کے ساتھ اس تعداد میں اہلکاروں کی اکٹھی ہلاکت کا واقعہ کم از کم جنوبی افغانستان میں کم ہی دیکھنے میں آیا ہے۔ ماہ دسمبر میں امریکی فوج کا ایک ہیلی کاپٹر طالبان نے مار گرایا تھا۔

برطانوی وزارت دفاع کے جاری بیان میں اس ہیلی کاپٹر کی تباہی ہفتے کے روز تسلیم کرتے ہوئے بتایا گیا ہے کہ مزید تفصیلات سامنے لانے سے پہلے مرنے والے اہلکاروں کے اہل خانہ کو اعتماد میں لے لیا جائے گا۔

دوسری جانب ایساف کے ترجمان نے اس واقعے کو 'حادثہ' قرار دینے کے باوجود اس امر پتہ چلانے کی کوششوں کا کہا ہے کہ یہ حادثہ کن حالات میں پیش آیا ہے تاکہ حقائق سامنے لائے جا سکیں۔ نیٹو فورسز نے اس ابتدائی بیان میں جائے حادثہ کی نشاندہی کی ہے نہ اس علاقے کا بتا ہے جس میں یہ ہیلی کاپٹر تباہ اور نہ ہی یہ بتایا ہے کہ متعلقہ علاقے میں طالبان کی موجودگی کی صورت حال کیا ہے۔

البتہ صوبائی پولیس کے ترجمان ضیا درانی کا کہنا ہے کہ ''نیٹو کا ایک ہیلی کاپٹر تختہ پل صوبہ قندھار میں تباہ ہو گیا ہے۔ ترجمان کے مطابق یہ ہیلی کاپٹر جنگی مشقوں میں مصروف تھا اور تکنیکی خرابی کا شکار ہوا ہے۔

اس ہیلی کاپٹرکی تباہی کی کسی گروپ نے ذمہ داری قبول نہیں کی ہے۔ امریکی حکام نے فوری طور پر اس واقعے کا سبب فنی خرابی بتایا ہے۔

واضح رہے رواں سال افغانستان سے امریکی اور نیٹو فورسز کے انخلاء کا سال ہے جبکہ متحارب فریقین کی کوشش ہے کہ ایک دوسرے کی قوت کو زیادہ سے زیادہ نقصان پہنچا سکیں۔