سعودی مذہبی پولیس کا اہلکار مخلوط پارٹی میں شرکت پر فارغ

اہلکار نے مخلوط تقریب سے فرار کے بعد خود کو پولیس کے حوالے کردیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

سعودی عرب کی مذہبی پولیس امر بالمعروف ونہی المنکر کمیشن کے ایک اہلکار کو مدینہ منورہ میں ایک مخلوط پارٹی میں شرکت پر فارغ کردیا گیا ہے اور اب اس کے خلاف عدالت میں مقدمہ چلایا جائے گا۔

سعودی گزٹ میں سوموار کو شائع شدہ ایک رپورٹ کے مطابق اس اہلکار کی شناخت ظاہر نہیں کی گئی۔وہ مخلوط تقریب کو چھوڑ کر اس وقت بھاگ گیا تھا جب اس کو پولیس فورس کی وہاں موجودگی کا پتا چلا تھا۔البتہ بعد میں وہ ایک پولیس اسٹیشن میں خود ہی پیش ہوگیا تھا۔

پولیس ذرائع کے مطابق اب اس اہلکار کو مزید تفتیش کے لیے ادارہ تحقیقات اور پبلک پراسیکیوشن کے حوالے کیا جائے گا اور اس کے بعد اس کے خلاف عدالت میں مقدمہ چلایا جائے گا۔

واضح رہے کہ سعودی مذہبی پولیس ملک میں شریعت کے نفاذ کی ذمے دارہے۔عوامی مقامات پر مردوخواتین کے مخلوط اجتماعات کو روکنا ،ضابطہ لباس کی پاسداری اور پنج وقتہ نمازوں کی پابندی کرانا اس کے فرائض میں شامل ہے۔ان احکام پر عمل درآمد کے لیے مذہبی پولیس کے اہلکار سڑکوں اور بازاروں میں گشت لگاتے ہیں اور خلاف ورزی کے مرتکب کسی بھی شخص کو پکڑ کر اس سے پوچھ تاچھ کرسکتے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں