فلسطینیوں کا وینزویلا سے تیل حاصل کرنے کا معاہدہ

معاہدہ محمود عباس کے دورہ کراکس کے موقع پر کیا گیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

وینزویلا کے صدر نکولس مدورو نے فلسطینی اتھارٹی کو تیل اور ڈیزل فراہم کرنے کا وعدہ کیا ہے۔ لاطینی امریکا کے اہم ملک کے سربراہ نے یہ یقین دہانی فلسطینی اتھارٹی کے صدر محمود عباس کے دورہ وینزویلا کے موقع پر کرائی۔

وینزویلا میں دنیا کے تیل کے بھاری ذخائر موجود ہیں۔ کراکس سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ "وینزویلا فلسطینی اتھارٹی کو ابتدائی طور پر 240،000 بیرل تیل فراہم کرے گا"، تاہم بیان میں یہ بات واضح نہیں کہ تیل کی یہ سپلائی کس طریقے سے عمل میں آئے گی؟

فلسطینی اتھارٹی کے صدر محمود عباس ان دنوں کراکس کے دورے پر ہیں۔ تیل فراہمی کے پیشکش پر انہوں نے صدر نکولس مدورو کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہ "وینزویلا کی فلسطین کے لیے امداد پر ہم کراکس حکومت کے شکر گزار ہیں۔ اس سے ہمیں اپنی معیشت پر اسرائیلی کںڑول کو کم کرنے میں مدد ملے گی۔ ہماری ضروریات اور فلسطینیوں کی جدوجہد میں ان کی امداد پر اہالیان فلسطین کراکس کا دل کی اتھاہ گہرائیوں سے شکریہ ادا کرتے ہیں۔"

دارلحکومت کراکس میں فلسطینی صدر محمود عباس کی صدر نکولس مدورو سے ہونے والی ملاقات میں موخر الذکر لاطینی امریکا کی تین علاقائی انجمنوں کی جانب سے فلسطینی اتھارٹی کی اقوام متحدہ میں مبصر ملک کے طور پر شمولیت کی کوششوں کی حمایت کا بھی یقین دلایا۔

اس موقع پر اظہار خیال کرتے ہوئے صدر نکولس مدورو نے کہا کہ فلسطینی عوام کو دنیا کے ساتھ معاشی روابط رکھنے کا پورا حق حاصل ہے۔

وینزویلا کے دورے کے موقع پر فلسطینی صدر محمود عباس نے نکولس مدورو کے پیش رو آنجہانی ہوگو شاویز کے مزار پر بھی حاضری دی۔

محمود عباس فلسطینیوں اور اسرائیل کے درمیان امن مذاکرات کی ناکامی کے بعد امریکی سیکرٹری خارجہ جان کیری سے پہلی مرتبہ لندن میں ملاقات کے بعد جمعرات کو وینزویلا پہنچے تھے۔

فلسطینی صدر نے وینزویلا کا دورہ ایک ایسے وقت میں کیا کہ جب فروری کے بعد ملک میں خونریز مظاہروں کا سلسلہ جاری ہے۔ نکولس مدورو ملک میں جاری بدامنی کو امریکی سرپرستی میں ان کی حکومت کا تختہ الٹنے کی کوشش قرار دیتے ہیں جس میں ابتک 42 افراد ہلاک ہو چکے ہیں۔ وینزویلا کے صدر کے اس بیان سے واشنگٹن اور کراکس کے تعلقات مزید کشیدہ ہوئے ہیں، تاہم امریکا کراکس میں حکومت تبدیلی کے الزامات کی نفی کرتا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں